حماس نئی جنگ بندی تجاویز پر آگے بڑھے : صدر جوبائیڈن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی صدر جو بائیڈن نے حماس پر زور دیا ہے کہ وہ غزہ میں جنگ بندی کے لئے دی گئی نئی تجاویز پر آگے بڑھے تاکہ جنگ بندی ممکن ہو سکے اور اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی ہو سکے۔ انہوں نے اس امر کا اظہار اسرائیلی وزیر اعظم نیتن ہاہو کے ساتھ فون پر بات چیت میں کیا۔ نیتن یاہو سے ان کا کہنا تھا کہ اسرائیل غزہ کے لئے امدادی سامان لانے والے ٹرکوں کو زیادہ تعداد میں داخل ہونے دے۔

صدر جوبائیڈن نے کہا ' اب انحصار حماس پر ہے کہ وہ جنگ بندی کے لئے دی گئی نئی تجاویز کا جواب کیا دیتا ہے۔ جوبائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں ایک پریس کانفرنس میں مزید کہا ' میں نے نیتن یاہو سے کہا ہے کہ غزہ میں جانے والی انسانی بنیادوں پر امداد کی مقدار اور ٹرکوں کی تعداد کافی نہیں ہے۔ اسے مزید بڑھایا جائے.

دوسری جانب حماس نے منگل کے روز تجاویز پر کہا ہے کہ اسرائیل حماس کی طرف سے جنگ بندی کے لئے مطالبات کو ان تجاویز میں پورا کرنے میں ناکام رہا ہے۔ تاہم حماس ابھی ان تجاویز پر غور کر رہا ہے تاکہ جنگ بندی کو حقیقی شکل مل سکے۔

خیال رہے یہ نئی تجاویز مصر اور قطر نے حماس کو قاہرہ میں حالیہ مذاکراتی دور مکمل ہونے کے بعد حماس کے حوالے کی ہیں۔ یہ تجاویز غزہ میں جاری اسراییلی جنگ کے چھ ماہ مکمل ہونے کے بعد دی گئی ہیں۔ رمضان المبارک کے دوران جنگ بندی ممکن نہ ہو سکی تھی۔ قاہرہ میں ہونے والی تازہ مذاکراتی نشست میں امریکی سی آئی اے چیف ولیم برنز بھی شریک ہوئے ہیں۔

حماس غزہ سے اسرائیلی فوج کا جامع انخلاء چاہتا ہے۔ نیز غزہ سے بے گھر ہونےوالے لاکھوں فلسطینیوں کو اپنے گھروں اور علاقوں میں منتقل ہونے کا، امدادی ترسیل میں کسی رکاوٹ کے بغیر تیزی لانے کے ساتھ ساتھ یرغمالیوں کے بدلے فلسطینی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کرتا ہے۔

اب تک اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں 33390 سے زائد فلسطینی جاں بحق ہو چکے ہیں۔ ان ہلاکتوں میں بڑی تعداد فلسطینی عورتوں اور بچوں کی ہے۔ جبکہ اسرائیل رفح پر زمینی حملے کی تیاری بھی مکمل کئے ہوائے اور غزہ میں اس نے فوجی اڈہ بھی تعمیر کر لیا ہے۔ علاوہ ازیں اسرائیل غزہ میں امدادی سامان کو ایک حد سے زیادہ نہیں پہنچنے دینا چاہتا ہے اور فلسطینیوں کی غزہ میں واپسی کو روکے رکھنا چاہتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں