آسٹریلوی ائیرلائن نے ایرانی حدود سے اجتناب کے لیے پروازوں کا رخ موڑ دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آسٹریلوی ایئرلائن کانٹاس نے ہفتے کے روز کہا کہ وہ شرقِ اوسط میں بڑھتی ہوئی کشیدگی کے درمیان ایران کی فضائی حدود سے گریز کے لیے پرتھ اور لندن کے درمیان اپنی طویل فاصلے کی پروازوں کا رخ موڑ دے گی۔

کانٹاس کے ترجمان نے اے ایف پی کو بتایا، "شرقِ اوسط کے کچھ حصوں کی صورتِ حال" کی وجہ سے ایئر لائن عارضی طور پر پرواز کے راستوں کو ایڈجسٹ کرے گی۔

نیز ترجمان نے کہا، "اگر ان کی بکنگ میں کوئی تبدیلی ہوتی ہے تو ہم براہ راست صارفین تک پہنچیں گے۔"

پرتھ-لندن پرواز جو عموماً ساڑھے 17 گھنٹے کا نان اسٹاپ سفر کرتی ہے، اب ایندھن بھرنے کے لیے سنگاپور میں رکے گی جس سے یہ مسافروں کا پورا بوجھ متبادل راستے پر لے جا سکے گی۔

واپسی کی سروس -- لندن تا پرتھ -- موجودہ فضاؤں کی وجہ سے دوبارہ ایڈجسٹ کردہ راستے پر نان سٹاپ پرواز کرتی رہے گی۔

دیگر تمام پروازیں متأثر نہیں ہوئی ہیں۔

کنٹاس ایرانی فضائی حدود سے بچنے والی لفتھانزا اور اس کی ذیلی کمپنی آسٹرین ایئر لائن سمیت دیگر ایئرلائنز میں شامل ہو گئی ہے۔

یہ اقدام اس وقت سامنے آیا ہے جب ایران نے اس مہینے شام میں ہونے والے حملے کا الزام اپنے قدیم دشمن اسرائیل پر عائد کیا جس میں دو ایرانی جنرل ہلاک ہوئے تھے اور جوابی کارروائی کی دھمکی دی تھی۔

اکتوبر میں غزہ کی پٹی میں جنگ شروع ہونے کے بعد سے اسرائیل نے شام میں ایران سے منسلک اہداف کے خلاف حملے تیز کر دیئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں