اسرائیل کے لیے فضائی اور زمینی راستہ دینے والے ممالک کو بھی نشانہ بنائیں گے:ایران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایران نے خبردار کیا ہے کہ اسرائیل کو زمینی اور فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دینے والے ممالک کو بھی نشانہ بنایا جائے گا۔

ایرانی پاسداران انقلاب کی جانب سے اتوار کو سامنے آنے والے اعلان میں کہا گیا ہے کہ اس نے اسرائیل پر درجنوں ڈرونز اور میزائل داغے ہیں۔

انتباہات

اتوار کو ایرانی وزیر دفاع محمد رضا اشتیانی نےخبردار کیا کہ اسرائیل کے لیے زمینی اور فضائی حدود کھولنے والے ممالک کو بھی نشانہ بنایا جائےگا۔

انہوں نے ایرانی ٹیلی ویژن پر نشر ہونے والے ایک بیان میں مزید کہا کہ ان کی افواج کسی بھی ایسے ملک کو جواب دیں گی جو اسرائیل کے لیے اپنی فضائی حدود یا سرزمین راستہ کھولے گا۔

انہوں نے کہا کہ "جو بھی ملک ایران پر حملہ کرنے کے لیے اسرائیل کے لیے اپنی فضائی حدود یا سرزمین کھولے گا اسے ہمارا فیصلہ کن جواب ملے گا"۔

یہ بات اسرائیلی فوج کی جانب سے اس بات کی تصدیق کے بعد سامنے آئی ہے کہ ایران نے اپنی سرزمین سے اسرائیل کی جانب ڈرون لانچ کیے ہیں۔

انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ "ہم ہائی الرٹ پر ہیں اور صورتحال پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں۔ فضائی دفاعی نظام، جنگی طیارے، اور بحری جہاز ہائی الرٹ پر ہیں"۔

انہوں نے کہا کہ وہ تمام اہداف کی نگرانی کر رہے ہیں، شہریوں سے ہوم فرنٹ کی ہدایات پر عمل کرنے کو کہتے ہیں۔

انہوں نے اسرائیل میں فضائی حدود بند کرنے اور ملک سے آنے اور جانے والی سویلین پروازوں کو بند کرنے کا بھی اعلان کیا۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان ڈینیئل ہاگاری نے کہا کہ فوج ایرانی ڈرون کو روکنے کی تیاری کر رہی ہے اور گلوبل پوزیشننگ سسٹم (جی پی ایس) میں گڑبڑ ہو گی۔ اسرائیلی فضائیہ ڈرونز کا سراغ لگا رہی ہے اور اسے احساس ہے کہ انہیں پہنچنے میں گھنٹے لگیں گے۔

دھمکیاں اور وارننگ

قابل ذکر ہے کہ اسرائیل اور ایران کے درمیان دھمکیوں اور وارننگز کا تبادلہ مہینوں قبل شروع ہوا تھا اور اس ماہ کے آغاز میں تل ابیب کی جانب سے دمشق میں تہران کے قونصل خانے کو نشانہ بنانے کے بعد اس میں شدت آئی تھی۔

تہران نے اپریل کے شروع میں دمشق میں ایرانی قونصل خانے پر حملے کے بعد اسرائیل سے بدلہ لینے کا عزم ظاہر کیا تھا، جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب کے دو جنرلوں سمیت 16 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

اس کے بعد سے اسرائیل کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے اور امریکہ نے مشرق وسطیٰ میں اضافی افواج بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں