فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیلی فوج غزہ میں حماس کےخلاف کارروائیوں کے لیےمخصوص ارکان کےڈویژنزکو متحرک کرے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے اتوار کو کہا کہ وہ جلد ہی غزہ میں کارروائیوں کے لیے فوج کے ارکانِ مخصوصہ کے دو ڈویژنوں کو طلب کرے گی جہاں وہ حماس کے خلاف جنگ آزما ہے۔

اگرچہ مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئیں لیکن فوج نے کہا، "حالات کے جائزے کے مطابق اسرائیلی دفاعی افواج غزہ کے محاذ پر کارروائیوں سے متعلق سرگرمیوں کے لیے تقریباً دو مخصوص بریگیڈز کو طلب کر رہی ہے۔"

ایک الگ بیان میں اسرائیل نے کہا کہ حماس نے جنوبی غزہ میں رفح میں یرغمالیوں کو رکھا ہوا ہے جہاں وزیرِ اعظم بینجمن نیتن یاہو نے بین الاقوامی احتجاج کے باوجود زمینی حملے کا عزم ظاہر کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان ریئر ایڈمرل ڈینیئل ہگاری نے ایک بریفنگ میں کہا، ''حماس اب بھی غزہ میں ہمارے یرغمالیوں کو روکے ہوئے ہے۔ ہمارے پاس بھی رفح میں یرغمال ہیں اور ہم انہیں وطن واپس لانے کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے۔''

اس ماہ کے اوائل میں اسرائیل نے غزہ سے کچھ افواج کو یہ کہہ کر نکال لیا تھا کہ فوجی علاقے بشمول رفح کے جنوبی علاقے میں مزید کارروائیوں کی تیاری کریں گے جہاں دس لاکھ سے زائد افراد پناہ گزین ہیں۔

اسرائیلی وزیرِ اعظم بینجمن نیتن یاہو نے حماس کی بٹالین کو کچلنے کے لیے کسی بھی حملے سے پہلے رفح سے شہریوں کو نکالنے کا وعدہ کیا ہے لیکن انہوں نے طے شدہ حملے پر بین الاقوامی تشویش کو کم کرنے کے لیے کچھ نہیں کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں