حزب اللہ رہنما جہاد ابو مہدی کے قتل کے پراسرار حالات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنانی حزب اللہ کے رہنما جہاد علی ابو مہدی "فدا" کے قتل کو پراسرار حالات نے گھیرا ہوا ہے۔ جہاد ابو مہدی 1969 عیسوی میں جنوبی لبنان کے قصبے خیال میں پیدا ہوئے تھے۔ اتوار کو لبنانی حزب اللہ نے اپنے اس رہنما کے قتل کا سوگ منایا۔ سوشل میڈیا پر شام کی لڑائی میں ان کی شناخت ظاہر کئے بغیر ان کے کردار پر بات کی گئی۔ ان موت کی تاریخ کی معلومات بھی نہیں دی گئیں۔

حزب اللہ نے ایک بیان میں اعلان کیا کہ پورے اعزاز اور اور فخر کے ساتھ اسلامی مزاحمت نے شہید جہاد علی ابو مہدی "فدا" کو القدس کی راہ میں شہادت پانے پر رخصت کیا۔ بیان میں مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئیں۔

اسرائیلی حملے

اسرائیلی فوج نے اتوار کے روز ایک بیان میں کہا کہ کچھ دیر قبل فضائیہ کے جنگی طیاروں نے لبنان کے اندرونی علاقے میں علاقے ’’نبی شیت‘‘ میں حزب اللہ تنظیم سے تعلق رکھنے والے ہتھیاروں کی تیاری کے ایک اہم مقام پر حملہ کیا ہے۔ یہ حملہ گذشتہ رات گھنٹوں تک لبنانی سرزمین سے شمالی اسرائیل پر کئے گئے آپریشنز کے جواب میں کیا گیا ہے۔

ویڈیوز میں اس حملے کے مناظر دکھائے گئے۔ حملے میں قصبے میں ایک عمارت کو نشانہ بنایا گیا۔ یہ عمارت تباہ ہوگئی۔ اس حملے میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں