اسرائیل کے کسی نئی حملے کا زیادہ طاقت اور سکینڈز میں جواب دیں گے: ایران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران نے ایک بار پھر اسرائیل کو خبردار کیا ہے کہ اگر اس نے حملہ کیا تو تہران پوری قوت سے جوابی کارروائی کرے گا اور چند سکینڈزمیں اسرائیل کو جواب دے گا۔

ایران کی طرف سے یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب مشرق وسطیٰ میں غیرمعمولی کشیدگی اور اسرائیل اور ایران کے درمیان دھمکیوں کا تبادلہ جاری ہے۔

اس حوالے سے اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ ان کا ملک گذشتہ ہفتے کئے گئے ایرانی حملے کا جواب دینے کے منصوبوں کا مطالعہ کر رہا ہے۔ ان کے پاس ایرانی حملے کا جواب دینے کے لیے ایک سے زاید آپشنز ہیں۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی نے منگل کے روز زور دے کر کہا کہ تہران کے ملک کے مفادات کو نشانہ بنانے والے کسی بھی اقدام پر ان کا ملک سخت ردعمل دے گا۔

ایران کے سیاسی امور کے نائب وزیر خارجہ علی باغیری کنی نے خبردار کیا کہ "ان کا ملک اسرائیل کے کسی بھی نئے حملے کا چند سیکنڈ میں جواب دے گا"۔

انہوں نے زور دیا کہ اسرائیلیوں نے "اس اپریل کے شروع میں دمشق میں ایرانی قونصل خانے پر بمباری کرکے ایک اسٹریٹجک غلطی کا ارتکاب کیا اور ایران کی فوجی اور دفاعی صلاحیتوں کے حقیقی امتحان کے لیے آئینی کور فراہم کیا‘‘۔

دمشق میں ایرانی قونصلیٹ کی ویب سائٹ سے
دمشق میں ایرانی قونصلیٹ کی ویب سائٹ سے

سخت دھچکا

انہوں نے ٹیلی ویژن پر گفتگو کرتے ہوئے زور دیا کہ "اپنی سٹریٹجک غلطی کو دوسری غلطی کے ساتھ نہ سمجھیں، کیونکہ اگر وہ اسے دہراتے ہیں تو انہیں مزید مضبوط، سخت اور تیز دھچکا لگنے کا انتظار کرنا ہوگا۔ اس بار انہیں 12 دن نہیں دیئے جائیں گے۔ایک دن اور گھنٹہ بھی نہیں بلکہ سیکنڈوں میں جواب دیا جائے گا۔

انہوں نے خبردار کیا کہ گذشتہ ہفتے کے روز اسرائیل پر کئے گئے حملے کے جواب میں کوئی بھی جوابی کارروائی اسرائیل کو مہنگی پڑے گی۔ ایران اسرائیل کو زیادہ طاقت کے ساتھ اورچند سکینڈز میں جواب دے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں