امریکی شہریوں کو تل ابیب، یروشلم اور بیرسبع سے باہر سفر پر گریز کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل میں امریکی سفارت خانے نے اپنے ملازمین اور ان کے اہل خانہ کو تل ابیب ، یروشلم اور بیرسبع سے باہر کسی بھی نجی دوروں پر اگلے نوٹس تک سفر کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ یہ ہدایت ایرانی میڈیا کے اس اعلان کے چند گھنٹے بعد سامنے آئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل نے ایران کے اندر حملہ کیا تھا۔

سفارت خانے نے کہا کہ اسرائیل کی جانب سے ایرانی حدود کے اندر جوابی حملہ کرنے کی اطلاعات کے بعد یہ احتیاطی اقدامات کیے گئے ہیں۔

ایرانی سرکاری میڈیا نے جمعہ کو صبح کے وقت خبر دی کہ وسطی اصفہان میں دھماکوں کی آوازیں سنی گئی ہیں، جب کہ امریکی میڈیا نے حکام کے حوالے سے کہا ہے کہ اسرائیل نے اپنے حریف کے خلاف جوابی حملے کیے ہیں۔

سرکاری ٹیلی ویژن نے اصفہان (وسطی) شہر کے قریب دھماکوں کی آواز سننے کے بعد ایران نے کئی شہروں پر اپنے فضائی دفاع کو فعال کر دیا۔

اسرائیل نے گذشتہ ہفتے ایران کی جانب سے سینکڑوں میزائلوں اور ڈرونز سے حملہ کرنے کے بعد اس کا جواب دینے کا عزم کیا تھا۔

فارس نیوز ایجنسی نے اپنی طرف سے اطلاع دی ہے کہ اصفہان کے قریب فوج کے شکاری ایئر بیس کے قریب "تین دھماکے" سنے گئے۔

ایرانی خلائی ایجنسی کے ترجمان حسین دیلریان نے ’ایکس‘ پلیٹ فارم پر کہا کہ ملک کے فضائی دفاع نے کئی ڈرونز کو کامیابی سے مار گرایا اور فی الحال میزائل حملے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

ایرانی "تسنیم" ایجنسی نے جمعے کے روز "قابل اعتماد ذرائع" کے حوالے سے کہا ہے کہ وسطی ایران میں اصفہان میں واقع جوہری تنصیبات "مکمل طور پر محفوظ" ہیں۔

امریکی میڈیا نے ایک اعلیٰ امریکی اہلکار کے حوالے سے بتایا ہے کہ اسرائیل نے ایران کے خلاف حملے کا آغاز گزشتہ ہفتے کے آخر میں کیے گئے ایرانی حملے کے جواب میں کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں