ایرانی دھماکوں میں اسرائیل کے ملوث ہونے کے بیان پر بین گویر کو تنقید کا سامنا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل کی انتہائی بائیں بازو کی جماعت کے وزیر برائے قومی سلامتی بین گویر کو اس وقت سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا جب ان کی طرف سے کہا گیا کہ ایران پر ہونے والے دھماکوں میں اسرائیل کا ہاتھ ہے۔ بین گویر نے ایران پر جمعہ کے روز ہونے والے دھماکوں میں اسرائیل کے ملوث ہونے کا تذکرہ کیا تھا۔

ایران کے سرکاری میڈیا کے مطابق یہ دھماکے وسطی صوبہ اصفہان میں ہوئے ہیں۔ دوسری جانب امریکی میڈیا نے امریکی حکام کے حوالے سے رپورٹ کیا ہے کہ اسرائیل نے ایران پر جوابی حملے کیے ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' نے اسرائیلی فوج اور اسرائیلی حکومت سے ایران پر ہونے والے حملوں سے متعلق رابطہ کیا تو اسرائیلی فوج اور اسرائیلی حکومت دونوں نے اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

نیتن یاہو حکومت کے رکن بین گویر نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر ایران پر ہونے والے حملوں سے متعلق لکھا 'ڈراؤنا!' خیال رہے عبرانی زبان میں اس کا مطلب کمزور ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ ان دھماکوں کے پیچھے اسرائیل کا ہاتھ تھا لیکن اس کی کارروائی کمزور تھی۔

بین گویر کی اس پوسٹ پر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز اور ٹی وی چینلز پر کافی رد عمل دیکھنے میں آیا ہے۔

دوسری جانب اپوزیشن لیڈر یائر لیپڈ نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر بین گویر کی پوسٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا 'اس سے پہلے کسی وزیر نے ملکی سلامتی اور اسرائیل کی بین الاقوامی حیثیت کو اتنا نقصان نہیں پہنچایا ہوگا۔'

یائر لیپڈ نے مزید لکھا 'ایک لفظ کی ٹویٹ کے ذریعے بین گویر تہران سے واشنگٹن تک اسرائیل کو شرمندہ کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔ ان کی یہ ٹویٹ ناقابل معافی ہے۔'

جیو پولیٹکس سے متعلق پوڈ کاسٹ میزبان شائیل بین ایفرائیم نے کہا ہے 'بین گویر اسرائیلی آپریشن کی تصدیق کرنے کے ساتھ ساتھ اس کا مذاق اڑا رہے ہیں۔' شائیل بین ایفرائیم نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر لکھا 'بین گویر نے ایسا کر کے اسرائیل کی ساکھ کو نقصان پہنچایا ہے۔ نیز اسے کمزور کیا ہے۔ کسی وزیر کے لیے یہ بےعزتی کا مقام ہے۔

خیال رہے ایرانی خبر رساں ادارے 'تسنیم' نے بین گویر کی ٹویٹ کو جمعہ کے روز ری ٹویٹ بھی کیا ہے۔

دوسری جانب نیتن یاہو کی لیکوڈ پارٹی سے تعلق رکھنے والی قانون ساز ٹیلی گوٹلیف نے ایران پر حملہ کو خوش آئند پیش رفت کہا ہے۔ سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر گوٹلیف نے لکھا 'یہ فخر کی ایک صبح ہے۔ اسرائیل ایک مضبوط اور طاقتور ملک ہے۔' خیال رہے گوٹلیف اسرائیلی پارلیمنٹ کی خارجہ امور اور سلامتی کمیٹی کی رکن بھی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں