ہم نے اصفہان میں ایک اڈے اور پاسداران انقلاب کے نو اہداف پر حملہ کیا: اسرائیلی اہلکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل کے موقر اخبار’یروشلم پوسٹ‘نے جمعہ کو کہا ہے کہ اصفہان پر اسرائیلی حملہ طویل فاصلے تک مار کرنے والے طیاروں کے ذریعے کیا گیا۔ اس میں ڈرونز یا زمین سے فضا میں مار کرنے والے میزائلوں کا استعمال نہیں کیا گیا۔ یہ دعویٰ ایرانی میڈیا کی رپورٹ کے برعکس ہے جس میں کہا گہا ہے کہ فضائی دفاع نے ملک کے وسط میں اصفہان میں تین چھوٹے ڈرونز کو تباہ کیا ہے۔

ایک اسرائیلی ذریعے نے یروشلم پوسٹ کو بتایا کہ "ہم نے اصفہان میں ایک ایرانی جوہری سائٹ کے قریب ایک فوجی اڈے کو نشانہ بنایا‘‘۔ اصفہان میں نشانہ بنایا گیا اڈہ اسرائیل پر حملہ کرنے والے ڈرون کی لانچنگ کو انجام دے رہا تھا۔ یہ حملہ "ایران کے لیے واضح پیغام ہے۔ اصفہان پر ہمارا حملہ یہ ظاہر کرتا ہے کہ ایران کی جوہری تنصیبات خطرے میں ہیں"۔ انہوں نے مزید کہا "ہم نے ایرانی پاسداران انقلاب کے ایک فضائی اڈے پر حملہ کیا اور اسے تباہ کردیا‘‘۔

اس سے پہلے اسرائیلی سکیورٹی اور حکومتی ذرائع نے یروشلم پوسٹ کو بتایا تھا کہ اسرائیل ہی نے ایران پر حملہ آج جمعہ کو کیا تھا، لیکن وہ "اسٹریٹیجک وجوہات کی بناء پر" اس کی ذمہ داری قبول نہیں کرے گا۔

اسرائیلی اخبار نے ان اہلکاروں کے حوالے سے کہا کہ "آنکھ کے بدلے آنکھ اور دانت کے بدلے دانت کے اصول کے تحت اسرائیل نے حملہ کرنے والوں کو جواب دیا ہے"۔

ذرائع نے بتایا کہ اسرائیل اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کرےگا۔ ایران نے کہا تھا کہ اصفہان شہر پر تین ڈرونز سے حملہ کیا گیا تھا۔ اس کی وجہ اسٹریٹیجک وجوہات تھیں۔

اسرائیلی چینل 12 نے رپورٹ کیا کہ اسرائیلی وزارت خارجہ نے بیرون ملک اپنی مشنوں سے کہا کہ وہ ایران میں ہونے والے واقعے پر تبصرہ نہ کریں۔

’این بی سی‘ اور ’سی این این‘ نے فائل کے قریبی ذرائع اور ایک امریکی اہلکار کے حوالے سے بتایا کہ اسرائیل نے واشنگٹن کو اس حملے کی پیشگی اطلاع دے دی تھی۔ ’سی این این‘ کے مطابق امریکی اہلکار نے کہا کہ "ہم نے جواب دینے پر اتفاق نہیں کیا"۔

دوسری جانب ایک "باخبر ذریعے" نے ایرانی "پریس ٹی وی" چینل کو آج جمعہ کو بتایا کہ اصفہان سمیت ایرانی شہروں پر بیرون ملک سے کوئی حملہ نہیں ہوا، جہاں آج پہلے فضائی دفاعی نظام کو فعال کیا گیا تھا۔

تسنیم خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اصفہان شہر کے مشرق میں نسبتاً زوردار دھماکے کی آواز سننے کے بعد صوبہ اصفہان میں فوج کے سینیر کمانڈر بریگیڈیئر جنرل مہن دوست نے کہا کہ یہ آواز فضا میں ایک مشتبہ چیز کو نشانہ بنانے کا نتیجہ تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں