سعودی عرب میں اقامتی قوانین کی خلاف ورزیوں پر 15000افراد کی گرفتاریاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ایک ہفتے کے دوران تقریباً 15,000 افراد اقامتی قوانین کے تحت حراست میں لے لیا گیا ہے۔ سعودی پریس ایجنسی کے مطابق عید کے بعد کی جانے والی یہ گرفتاریاں رہائش، کام اور سرحدی حفاظتی ضوابط کی پابندی نہ کرنے والے لوگوں کی گئی ہیں اب باقی قانونی پراسس شروع ہو گیا۔

سرکاری طور پر جاری کردہ رپورٹ کے مطابق اقامتی قوانین کی خلاف ورزی پر کی گئی تازہ کارروائیوں کے تحت کل 9,479 لوگ گرفتار کیے گئے ہیں۔ جب کہ 3,763 کو غیر قانونی بارڈر کراسنگ کی کوششوں پر گرفتار کئے گئے۔ جبکہ 1,430 کو مزدوری اور ملازمت سے متعلقہ مسائل پر گرفتار کیا گیا ہے۔

سعودی پریس رپورٹ میں بتایا گیا دوسرے ملکوں سے غیر قانونی طور پر داخل ہونے کی کوشش کرنے پر گرفتار کیے گئے 996 افراد میں سے 64 فیصد ایتھوپیا، 33 فیصد یمنی اور تین فیصد دیگر قومیتوں کے تھے۔ مزید 37 افراد ہمسایہ ممالک میں داخل ہونے کی کوشش کرتے ہوئے پکڑے گئے اور چھ کو خلاف ورزی کرنے والوں کو نقل و حمل اور اپنے ہاں غیر قانونی طور پر تحفظ دینے میں ملوث ہونے پر گرفتار کیا گیا۔

وزارت داخلہ کے مطابق کوئی بھی شخص مملکت میں غیر قانونی داخلے کی سہولت فراہم کرتا ہوا پایا گیا، جس میں نقل و حمل اور پناہ گاہ فراہم کرنا بھی شامل ہے، اسے زیادہ سے زیادہ 15 سال قید، ایک ملین ریال تک جرمانے کے ساتھ ساتھ رقم کی ضبطی کی سزا ہو سکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں