ملک سے غداری اور دہشت گردی کے الزام میں سعودی باشندے کو سزائے موت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے سعودی شہری عبدالرحمن بن سایر بن عبداللہ الشمری کے خلاف فوج داری کارروائیوں کے ارتکاب پر سزائے موت سنائی۔ ملزم کےخلاف ملک کے ساتھ غداری اور دہشت گردانہ رویہ اختیار کرنے مملکت کی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کا الزام عاید کیا گیا۔

بیان میں اشارہ کیا گیا ہے کہ مجرم نے جنگی علاقوں میں جانے، دہشت گرد گروپ میں شامل ہونے اور اس میں قیادت کا عہدہ سنبھالنے، جنگی کارروائیوں میں حصہ لینے، دہشت گردی کی کارروائیوں کی مالی معاونت کے علاوہ ملک کے ساتھ غداری جیسے سنگین جرائم کا ارتکاب کیا تھا۔

بیان میں کہا گیا ہے "پبلک پراسیکیوشن" کی تحقیقات نے مذکورہ شخص پر ان مجرمانہ حرکتوں کے ارتکاب کا الزام عائد کرتے ہوئےاس کے خلاف فوج داری دفعات کے تحت مقدمہ چلایا۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سعودی عرب میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہونے والے عناصر اور ملک کے ساتھ غداری کرنے والوں سے کسی قسم کی نرمی نہیں برتی جائے گی بلکہ اس نوعیت کے تمام ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں