یروشلم میں کار تلے کچلنے کے واقعے میں دو افراد زخمی: اسرائیلی پولیس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی پولیس نے کہا کہ پیر کی صبح یروشلم میں کار تلے کچلنے کے واقعے میں دو شہری زخمی ہو گئے نیز یہ کہ وہ مشتبہ حملہ آوروں کی تلاش کر رہے تھے جو پیدل فرار ہو گئے۔

یہ واقعہ یروشلم کی تخلت مردکے سڑک پر ایک ایسے دن پیش آیا جب اسرائیلی یہودیوں نے عیدِ فصح کی تعطیلات کا آغاز کیا۔

پولیس نے ایک بیان میں کہا، "تھوڑی دیر پہلے ایک اطلاع ملی کہ یروشلم میں دو شہری تخلت مردکے سڑک پر گاڑی سے ٹکرا گئے تھے جس کے نتیجے میں انہیں معمولی زخم آئے۔"

بیان میں کہا گیا، "دو دہشت گرد جائے وقوعہ سے پیدل فرار ہو گئے اور ان کے فرار کے راستے سے ایک دیسی ساختہ ہتھیار برآمد ہوا" اور مزید کہا کہ سیکورٹی فورسز مشتبہ افراد کی تلاش کر رہی تھیں۔

میگن ڈیوڈ ایڈوم ایمرجنسی سروس کے طبی ماہرین نے بتایا کہ دو زخمیوں کی عمریں 18 اور 22 سال تھیں۔

کئی اسرائیلی نیوز ویب سائٹس پر سکیورٹی کیمروں کی فوٹیج پوسٹ کی گئی جس میں ایک سفید گاڑی کو سڑک کے کونے پر لوگوں کے ایک گروپ کو کچلتے ہوئے دکھایا گیا۔

یہ بعد میں ایک اور کھڑی ہوئی گاڑی سے ٹکرا گئی جس کے بعد دو آدمی باہر نکلے اور حملہ آوروں میں سے ایک بندوق سے فائر کرنے کی کوشش کرتا نظر آیا۔

چند ثانیوں کے بعد دونوں اس مقام سے دور جاتے ہوئے نظر آئے۔

گذشتہ سال سے اسرائیل کے متعدد شہروں اور مقبوضہ مغربی کنارے کی بستیوں میں کار تلے کچلنے کے متعدد حملے رپورٹ ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں