بحرین کے ولی عہد اور امریکی وزیر خارجہ کے درمیان مشرقی وسطیٰ کی صورتحال پرتبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بحرین کے ولی عہد شہزادہ سلمان بن حماد کی امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو ہوئی ہے ۔اس گفتگو میں غزہ کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے ۔ نیز گفتگو میں علاقائی اور عالمی سطح پر موجود دو طرفہ مفادات اور دلچسپی کے امور پر بات چیت کی گئی ۔ یہ ٹیلیفونک رابطہ پیر کے روز ہوا ۔
ولی عہد نے بحرین اور امریکہ کے درمیان شراکت داری ، تعلقات اور معاہدات کی مضبوطی پر زور دیا اور یہ اجاگر کیا کہ دوطرفہ رابطہ مشترکہ اہداف کے حصول کے لیے بہت مفید ہے۔

بحرین کے خبر رساں ادارے کے مطابق بحرین اور امریکہ کے درمیان اس اعلی سطح پر ہونے والی گفتگو میں مشرقی وسطیٰ کی صورتحال اور تازہ منظر نامے پر ہونے والی گفتگو میں اسرائیل کی غزہ پر جنگ بھی زیر بحث آئی ۔ولی عہد نے اس موقع پر ' فلسطین کاز ' کے بارے میں دیرینہ بحرینی موقف کا اعادہ کیا اور مسئلے کے پر امن اور پائیدار حل پر زور دیا تا کہ ایک ایسی آزاد فلسطینی ریاست کا قیام ممکن ہوسکے جس کا دارالحکومت مشرقی یروشلم ہو ۔

انہوں نے غزہ میں شہریوں کے تحفظ اور انسانی بنیادوں پر امدادی کارروائیوں پر بھی بات چیت کی اور زور دیا ان کا کہنا تھا کہ غزہ میں جاری اسرائیلی جنگ کی وجہ سے خطے کی سلامتی کو خطرہ ہے ۔

امریکی دفتر خارجہ کے مطابق دونوں رہنماؤں نے امر پر اپنے پہلے سے موجود موقف کا اظہار کیا کہ غزہ کی جنگ کو پورے خطے میں نہیں پھیلنا چاہیے ۔ وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے اس موقع پر بحرین کا شکریہ ادا کیا کہ سمندری جہاز رانی کے تحفظ کے لیے بحرین نے امریکہ اور اتحادیوں کا ساتھ دیا ہے ۔ وزیر خارجہ نے بحرین کے ساتھ سلامتی ، خوشحالی اور ترقی کے لیے جاری کوششوں کی اہمیت اجاگر کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں