اسرائیلی فوج اور لبنانی حزب اللہ کے درمیان سرحد پار سے گولہ باری کا تبادلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی فوج اور لبنانی حزب اللہ گروپ نے بدھ کے روز سرحد پار سے گولہ باری کا تبادلہ کیا۔ دونوں اطراف سے گولہ باری کوئی نئی بات نہیں بلکہ فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پرسات اکتوبر 2023ء سے جاری جنگ کے دوران یہ روز مرہ کا معمول ہے۔

بدھ کے روز اسرائیلی فوج کے ایک بیان میں بتایا گیا کہ اس نے جنوبی لبنان کے کئی علاقوں میں حزب اللہ کے فوجی کمپاؤنڈز اور بنیادی ڈھانچے پر بمباری کی ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ حزب اللہ نے میزائل داغے جو شامیرا کے علاقے میں خالی زمین پر گرے۔

بعد ازاں حزب اللہ نے دعویٰ کیا کہ اس نے شمالی اسرائیل میں شامیرا کے علاقے میں درجنوں کاتیوشا راکٹ فائر کیے۔ حزب اللہ کے بہ قول اس نے یہ حملے جنوبی لبنان پر اسرائیلی حملوں، خاص طور پر حنین کے قصبے پر حالیہ حملے کے ردعمل میں کیے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے بتایا کہ اس نے طیر حرفا کے علاقے میں شمالی اسرائیل کی طرف میزائل داغنے کے لیے استعمال ہونے والے پلیٹ فارم اور حزب اللہ کے ایک فوجی کمپاؤنڈ پر بمباری کی۔

فوج نے کہا کہ رات کے دوران اس نے عیتا الشعب میں مرکبا کے علاقے میں حزب اللہ کے بنیادی ڈھانچے کو بھی نشانہ بنایا۔ اس کے علاوہ عتیا الشعب میں مروحین میں ایک مانیٹرنگ پوائنٹ اور شیخین اور کفرشوبا میں خطرے کے ازالے کے لیے توپ خانےسے گولہ باری۔

لبنانی حزب اللہ نے منگل کی شام اعلان کیا کہ اس نے شمالی اسرائیل کو درجنوں کاتیوشا راکٹوں سے نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے ایک بیان میں مزید کہا کہ مارغلیوت کو اسرائیلی فوج کی فلسطینیوں کے خلاف کارروائیوں اور جنوبی لبنان میں شہریوں پر حملوں کےرد عمل میں نشانہ بنایا۔

درایں اثناء اسرائیلی اخبار ہارٹز نے رپورٹ کیا کہ 10 سے 15 پروجیکٹائل شمالی اسرائیل پر فائر کیے گئے اور مارغلیوٹ کے علاقے میں گرے، جس سے وہاں بجلی منقطع ہو گئی تاہم اس حملے کے دوران خطرے کے سائرن نہیں بجائے گئ۔

لبنان کی قومی خبر رساں ایجنسی نے آج بدھ کو اطلاع دی ہے کہ ملک کے جنوب میں نبطیہ گورنری کے قصبے حنین میں ایک گھر پر اسرائیلی حملے میں ایک خاتون اور ایک 11 سالہ بچی ہلاک ہو گئیں۔ حملے میں چھ افراد زخمی بھی ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں