سعودی عرب میں پچھلے برس گلاب پھولوں کی ریکارڈ کاشت

سال2023ء میں مملکت میں 960 ملین گلاب کاشت کیے گئے جب کہ 2026ء میں 2 ارب پھولوں کی کاشت کا ہدف مقرر ہے:دیہی ترقیاتی پروگرام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے سسٹین ایبل رورل ایگریکلچرل ڈویلپمنٹ پروگرام (سعودی عرب دیہی پروگرام ) نے انکشاف کیا ہے کہ مملکت میں گلاب کی پیداوار میں گزشتہ سال 34 فیصد اضافہ ہوا جو 2020 میں 500 ملین گلاب سے بڑھ کر 960 ملین گلاب تک پہنچ گیا۔ دیہی ترقی کا کہنا ہے کہ گلاب کے شعبے کا مقصد 2026ء تک 2ارب گلابوں کی پیداوار تک پہنچنا ہے۔

دیہی ترقی پروگرام کے مطابق اس نے مملکت میں گلاب کی کاش کے کئی شعبوں کے منصوبوں میں کاشت کاروں کو مدد فراہم کی۔ خاص طور پر جازان کے علاقے میں گلاب اور خوشبودار پودوں کے لیے شہروں کا قیام، اور جیزان اور طائف کے علاقوں میں گلاب اور خوشبودار پودوں کی نرسریوں کا قیام عمل میں لایا گیا۔ ابوعریش میں گلاب اور پودوں کے پتوں سے عرق نکالنے کا پلانٹ اور گلاب کے پودوں اور پھولوں کو کیڑوں سے بچانے کے لیے چار 4 موبائل کلینکس کا قیام عمل میں لایا گیا۔

مصنوعی ذہانت کا استعمال کرتے ہوئے گرین ہاؤسز کی فراہمی، گلاب اور خوشبودار پودوں کے شہروں کے لیے زرعی چھتریوں اور آبپاشی کے نیٹ ورکس کی تشکیل، ریاض میں اعلیٰ معیار کے گلاب پیدا کرنے کے لیے ٹشو کلچر لیبارٹری کے قیام اوراسے جدید سہولیات سےآراستہ کرنے کے لیے مراکز کا قیام بھی دیہی ترقی پروگرام شامل ہے۔

یہ پروگرام اس شعبے کو ترقی دینے اور گلاب کی پیداوار کو بہتر بنانے کے لیے 10 سے زیادہ مخصوص منصوبے تیار کر رہا ہے تاکہ 2026ء میں گلاب کی پیداوار کا حجم 2 بلین تک پہنچانےکا ہدف مکمل کیا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں