لبنان میں خاتون وکیل کےساتھ دن دیہاڑے بدسلوکی اور مار پیٹ کا لرزہ خیز واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان میں ایک خاتون وکیل کےساتھ دن دیہاڑے بدسلوکی کے واقعے نے عوامی حلقوں میں شدید غم وغصے کی لہر دوڑا دی ہے۔

لبنان میں سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ بیروت کے قریب الشیاح کے علاقے میں ایک عدالت کے سامنے خاتون وکیل کو سرے عام گھسیٹا جا رہا ہے اور اسے مار پیٹ کی جا رہی ہے۔

تفصیلات سے پتا چلا ہے کہ خاتون وکیل پر تشدد کرنے والا شخص اس کی مؤکلہ کا شوہر اوراس کا ایک ساتھی ہے۔ دوسری جانب حکام نے اس واقعے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

اخبار ’النہار‘ کے مطابق ابتدائی معلومات سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ واقعہ طلاق کے مقدمے کے پس منظر میں پیش آیا جس میں وکیل سوزی بو حمدان نے بیوی کی طرف سے وکالت کی۔

بیروت بار ایسوسی ایشن متحرک

دوسری جانب بیروت بار ایسوسی ایشن نے کل جمعرات کو ایک بیان جاری کیا، جس میں اس نے بو حمدان پر حملے کی مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وکیل پر تشدد کرنے والے دونوں افراد کی شناخت معلوم ہے اور ان کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے تصدیق کی کہ بیروت بار ایسوسی ایشن کے سربراہ فادی مصری نے فوری طور پر کارروائی کی اور محل انصاف کی کمشنر مایا زغرینی کو مجاز عدالتی اور سکیورٹی حکام کے ساتھ اس معاملے کی انکوائری کی ذمہ داری سونپی۔

زیادہ سے زیادہ سزائیں

بو حمدان کے ساتھ ذاتی استغاثہ کا مقدمہ لے گی انہوں نے مزید کہا کہ پبلک پراسیکیوٹر جج رامی عبداللہ نے حملہ آوروں کے خلاف سمن جاری کیا۔

اس نے مجازعدلیہ سے تشدد کرنے والوں کے خلاف زیادہ سے زیادہ سزائیں دینے کا بھی مطالبہ کیا۔

دریں اثنا، سوزی بو حمدان نے فوری شکایت درج کرائی پولیس سے اس کی واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کیا ہے۔

اعتراف اور معذرت

بعد ازاں سوشل میڈیا پر ایک شخص کی ویڈیو گردش میں آئی جس نے اپنی شناخت مہدی الموسوی کے نام سے کرائی اور بو حمدان پر حملے کا اعتراف کرتے ہوئے بار ایسوسی ایشن اور فادی مصری سے معافی مانگی۔

اس نے اپنے رویے کو ان "نفسیاتی اور سماجی دباؤ" کا نتیجہ قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں