حزب اللہ کی کارروائی سےایک اسرائیلی ہلاک، گاڑیاں بھی نشانہ بن گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لبنانی ملیشیا حزب اللہ کی فائرنگ سے ایک اسرائیلی ہلاک ہو گیا ہے۔ اس امر کا اعلان اسرائیلی فوج نے جمعہ کے روز کیا ہے۔ خیال رہے ان دنوں اسرائیلی فوج اور ایرانی حمایت یافتہ حزب اللہ کے درمیان جھڑپوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔ اسرائیلی فوج نے جنوبی لبنان کو بطور خاص ہدف بنا رکھا ہے۔ اسرائیل کا کہنا ہے کہ اس نے حزب اللہ کی جنوبی کمان میں شامل کمانڈروں کی بڑی تعداد کو ہلاک کر دیا ہے۔

دوسری جانب حزب اللہ نے بھی اسرائیلی سرحدی علاقوں تک اپنی کارروائیوں کو جاری رکھا ہوا ہے اور آئے روز دونوں کے درمیان جھڑپیں ہورہی ہیں۔ جس کے نتیجے فریقین کے سرحدی علاقوں سے جڑے ہزاروں شہری نقل مکانی پر مجبور ہو چکے ہیں۔حزب اللہ نے راکٹ حملے بڑھا دیے ہیں اور مقابلتا زیادہ جارحانہ انداز کےساتھ ہےکارروائیاں کر رہی ہے۔

دونوں طرف یہ احساس پایا جاتا ہے کہ جس رفتار سے دونوں طرف شدت آرہی ہے ۔ اس کے نتیجے میں 2006 کی طرح کی ایک مکمل اور بھر پور جنگ چھڑ سکتی ہے۔
جیسا کہ رواں ہفتے کے دوران دونوں فریق زیادہ شدت سے ایک دوسرے پر حملہ آور ہونے کی کوشش میں ہیں۔ اسرائیلی فوج کے مطابق جمعہ کے روز متنازعہ شیبا فارمز حزب اللہ نے ٹینک شکن میزائل فائر کیے تھے اور اسرائیل کے شمالی علاقے ہارڈوو کو نشانہ بنایا۔

اس دوران ایک اسرائیل کارکن جو انفراسٹرکچر کی تعمیر میں مصروف تھا زخمی ہو گیا اور بعد ازاں ہلاک ہو جانے کی تصدیق بھی کر دی گئی۔ اسرائیلی میڈیا نے اس شخص کو بعد از ہلاکت عرب شہری قرار دیا ہے۔ اسرائیلی پولیس نے بین الاقوامی خبر رساں ادارے کو بتایا ہے کہ اس شخص کی شناخت ہو گئی ہے ۔ مگر اس کو ٹرک نے ٹکر ماری تھی۔

حزب اللہ نے دعوی کیا ہے کہ اس نے کفر شوبا کی پہاڑیوں کے علاقے میں ایک کارروائی کے دوران دو اسرائیلی گاڑیوں کا نشانہ بنایا اور دونوں کو تباہ کر دیا ہے۔ حزب اللہ کے مطابق اس نے توپ خانے اور میزائلوں کا استعمال کیا ہے۔ اسرائیلی فوج نے اس بارے میں کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے جنگی طیاروں نے جنوبی لبنان کے شیبا گاوں میں بمباری کر کے حزب اللہ کے اہداف کا نشانہ لیا ہے۔ اسرائیل کی جانب سے جنوبی لبنان ہی کے علاقے عین التینہ کے علاقے میں ایک فوجی کمپاؤنڈ کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔

لبنان کی نیشنل نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق شیبا گاؤں، کفر شوبا اور ہیلٹا میں مجموعی طور پر 150 سے زیادہ اسرائیلی گولے فائر کیے گئے۔ جس سے مقامی لوگوں کے گھروں کو نقصان پہنچا۔

سات اکتوبر 2023 کے بعد سے فلسطینی مزاحمتی تحریک حماس کی حامی حزب اللہ اسرائیلی فوج کے ساتھ تقریباً روزانہ فائرنگ کا تبادلہ کر رہی ہے۔ 'اے ایف پی' کے اعداد و شمار کے مطابق، 8 اکتوبر سے اب تک لبنان میں کم از کم 380 افراد ہلاک ہو چکے ہیں، جن میں حزب اللہ کے 252 اہلکار اور درجنوں عام شہری شامل ہیں۔ اسرائیل کا کہنا ہے کہ اس کی سرحد پر 11 فوجی اور نو شہری مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں