برطانوی فوجیوں کو غزہ کی امداد پہنچانے کا کام سونپا جا سکتا ہے: بی بی سی کی رپورٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بی بی سی نے ہفتے کے روز رپورٹ کیا کہ برطانوی فوجیوں کو ساحل سے پرے ایک پشتے سے غزہ کے لیے امداد پہنچانے کا کام سونپا جا سکتا ہے جو اس وقت امریکی فوجی تعمیر کر رہے ہیں۔ برطانوی حکومت کے عہدیداروں نے اس رپورٹ پر تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔

بی بی سی کے مطابق برطانوی حکومت ٹرک چلانے کے لیے فوجیوں کی تعیناتی پر غور کر رہی ہے جو تیرتے ہوئے پگڈنڈی نما راستے کے ساتھ پشتے سے امداد لے کر ساحل تک جائیں گے۔

بی بی سی نے نامعلوم سرکاری ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے رپورٹ کیا کہ ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے اور یہ تجویز وزیرِ اعظم رشی سوناک تک نہیں پہنچی ہے۔

یہ رپورٹ اس وقت سامنے آئی ہے جب جمعرات کو ایک سینئر امریکی فوجی اہلکار نے کہا تھا کہ اس مقصد کے لیے کوئی امریکی فوجی وہاں "قدم نہ رکھے" گا اور ساحل تک ڈیلیوری ٹرک چلانے کے لیے اہلکار کوئی اور ملک فراہم کرے گا۔

اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر نامہ نگاروں سے اس معاملے کی تفصیلات کے بارے میں بات کی جو ابھی تک عام نہیں کی گئیں۔ انہوں نے تیسرے فریق کی شناخت بتانے سے انکار کر دیا۔

برطانیہ پہلے ہی پشتے کی تعمیر کے لیے لاجسٹک معاونت فراہم کر رہا ہے جس میں شاہی بحریہ کا ایک جہاز بھی شامل ہے جو منصوبے پر کام کرنے والے سینکڑوں امریکی فوجی اور ملاحوں کو رہائش دے گا۔

برطانیہ کی وزارتِ دفاع نے جمعہ کو کہا کہ اس کے علاوہ برطانوی فوجی منصوبہ ساز فلوریڈا اور قبرص میں امریکی سنٹرل کمانڈ میں کئی ہفتوں سے سرایت کر چکے ہیں جہاں امداد کا غزہ بھیجنے سے پہلے معائنہ ہو گا۔

برطانیہ کے ہائیڈروگرافک آفس نے بھی پشتے کی تعمیر میں مدد کے لیے غزہ کی ساحلی پٹی کے تجزیئے کا امریکہ کے ساتھ اشتراک کیا ہے۔

وزیرِ دفاع گرانٹ شیپس نے ایک بیان میں کہا، "یہ بہت اہم ہے کہ ہم غزہ کے لوگوں تک ضروری انسانی امداد کے لیے مزید راستے قائم کریں اور برطانیہ امریکہ اور اپنے بین الاقوامی اتحادیوں اور شراکت داروں سے رابطہ کاری کے ساتھ مدد کی فراہمی میں ایک اہم کردار ادا کرتا رہے گا۔"

غزہ میں بندرگاہ اور پشتے کی ترقی اس وقت سامنے آئی ہے جب اسرائیل کو فلسطینی علاقے میں امداد کی سست فراہمی پر وسیع بین الاقوامی تنقید کا سامنا ہے۔ اقوامِ متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ فلسطین کی کم از کم ایک چوتھائی آبادی فاقوں کے دہانے پر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں