رفح پر حملے سے قبل مذاکرات کا آخری موقع ہے: اسرائیل کا مصر کو پیغام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی ویب سائٹ 'axios' نے اسرائیلی حکام کے حوالے سے رپورٹ کیا ہے کہ 'مصر کو پیغام دیا گیا ہے کہ رفح پر حملے سے قبل اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی کے لیے مذاکرات کا یہ آخری موقع ہے۔'

اسرائیلی حکام نے جمعہ کے روز مصری حکام سے کہا ہے کہ 'اسرائیل رفح پر حملے کے لیے سنجیدہ ہے اور حماس کو نکلنے کا کوئی راستہ نہیں دے گا۔'

امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے 'ایم ایس این بی سی' کو دیے گئے انٹرویو میں کہا ہے کہ جنگ بندی اور اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی کے لیے مذاکرات میں نیا پن دیکھا ہے۔

جیک سلیوان سے انٹرویو کے دوران کہا گیا 'کیا یرغمالیوں کے لیے ہونے والے مذاکرات میں کوئی نئی زندگی ہے؟ تو جیک سلیوان نے کہا 'مجھے یقین ہے کہ موجود ہے۔'

مصر رفح پر اسرائیلی حملے کی صورت میں غزہ پناہ گزینوں کے مصر میں داخلے کے حوالے سے فکر مند ہے۔ یہی وجہ ہے کہ مصر مذاکرات میں فعال کردار ادا کر رہا ہے۔

اسرائیلی عہدیدار نے کہا ہے 'مصر مذاکراتی عمل کو آگے بڑھانا چاہتا ہے۔' قطر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے اسرائیلی عہدیدار نے کہا 'اسرائیل قطر کو ایک اہم ثالث کے طور پر دیکھ رہا تھا۔ لیکن قطر نے حماس رہنماؤں کی قطر سے بےدخلی اور ان کی معاونت سے متعلق جواب نہیں دیا ہے۔ اب بھی قطر مذاکرات کا حصہ ہے لیکن اس کی صلاحیت پہلے کے مقابلے میں کم ہے۔' تاہم حماس کا کہنا ہے کہ مصر اور قطر مذاکراتی عمل کے لیے ایک اہم ثالث ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں