دو جنگجووں سمیت تین لبنانیوں کی ہلاکت کے بعد اسرائیلی فوجی یونٹس پر حزب اللہ کے ڈرون

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کی ایران کی حمایت یافتہ لبنانی ملیشیا حزب اللہ نے ہفتے کے روز شمالی اسرائیل پر ڈرون اور گائیڈڈ میزائلوں سے حملے کرنے کی اطلاع دی ہے۔ حزب اللہ کے مطابق اسرائیل ہر یہ تازہ حملے حزب اللہ کے دو اہلکاروں سمیت تین لبنانیوں کی اسرائیلی حملوں میں ہلاکت کے بعد کیے گئے ہیں۔
تاہم حزب اللہ کی طرف سے ان تازہ ڈرون حملوں کے نتیجے یا گائیڈڈ میزائلوں کی مدد سے کیے گئے حملوں میں اسرائیل کے جانی و دیگر نقصان کا نہیں بتایا گیا ہے۔

حزب اللہ کے ہفتے کے روز جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس نے المنارا ملٹری کمانڈ کے ہیڈ کوارٹر اور گولانی بریگیڈ کی 51ویں بٹالین کی فورسز کے ایک اجتماع پر دھماکہ خیز ڈرون اور گائیڈڈ میزائلوں کا استعمال کرتے ہوئے ایک بڑا حملہ کیا ہے۔

تقریباً سات ماہ قبل غزہ میں اسرائیل کی جنگ شروع ہونے کے بعد سے لبنان اور اسرائیل کے درمیان سرحد پر تقریباً روزانہ فائرنگ کا تبادلہ جاری ہے۔ ہفتے کے روز اسی سلسلے میں حزب اللہ کے دو بیانات سامنے آئے۔

ایک بیان میں حزب اللہ نے کفر کیلا اور خیام کے دیہات سے دو اپنے جنگجوؤں کی ہلاکت پر سوگ کا اظہار کیا اور کہا وہ یروشلم جانے والے راستے میں شہید ہو گئے۔ یہ جملہ اسرائیلی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے حزب اللہ کے ارکان کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

یکم اپریل کو تہران کے دمشق قونصل خانے پر اسرائیلی بمباری کے بعد اسرائیل اور ایران کے درمیان کشیدگی میں اضافے کے ساتھ ساتھ حزب اللہ کی طرف سے اسرائیل میں فوجی مقامات کو نشانہ بنانے میں تیزی لائی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں