سعودی عرب: دہشت گردانہ طرزعمل اختیار کرنے والے شدت پسند کا سر قلم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ اس نے سعودی شہری نعمان بن عافت بن مضحی الظفیری نامی مجرم کے خلاف سنائی گئی سزائے موت پرعمل درآمد کرتے ہوئے اس کا سر قلم کردیا۔

سزا پانے والا مجرم ملک کے ساتھ غداری، مملکت کے امن کو تباہ کرنے اور عوامی اور قومی سلامتی کو خطرے میں ڈالتے ہوئے دہشت گردی کی روش پر عمل پیرا تھا۔ اس نے دہشت گردی کی کارروائیوں اور دہشت گردانہ روش کوآگے بڑھاتے ہوئے نہتے شہریوں کا خون بہانے اور املاک کو تباہ کرنے جیسے سنگین جرائم کا ارتکاب کیا تھا۔

Advertisement

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن کی طرف سے تفتیش کے تکمیل اور مذکورہ بالا مجرم پر اس کی مجرمانہ حرکات کے ارتکاب کے تمام ثبوت فراہم کرنے کے بعد فوج داری عدالت کی طرف سے سزائے موت سنائی تھی۔ ملزم کی طرف سے سعودی عرب کی سپریم کورٹ میں سزا کے خلاف اپیل کی تھی جسے سپریم کورٹ نے مسترد کرتے ہوئے سزائے موت کو برقرار رکھا تھا۔ سپریم کورٹ کی طرف سے فیصلہ آنے کے بعد کل ہفتہ 27 اپریل کو ملزم کی سزا پرعمل درآمد کردیا گیا۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ ملک کی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کی کوشش کرنے والوں کے ساتھ کسی قسم کی نرمی نہیں برتی جائے گی اور قومی سلامتی کے مجرموں کے ساتھ انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں