سعودی دستاویزی فلم "ہوریزن" نے بین الاقوامی تخلیقی ایوارڈ جیت لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی دستاویزی فلم "ہوریزن" نے کئی بین الاقوامی کاموں کے مقابلے کے بعد اپنی تشہیری لانچ مہم کے لیے پلاٹینم کیٹیگری میں مشہور ہرمیس انٹرنیشنل کری ایٹو ایوارڈ جیتا۔

فلم "ہوریزن" سعودی عرب میں ماحولیاتی تنوع کے بارے میں آگاہی کوفروغ دینے کے لیے تیار کی گئی ہے۔ یہ منفرد جغرافیائی خطوں کی وضاحت کرتی ہے اور وہاں پر جنگلی حیات کے تحفظ ،نایاب انواع کے تحفظ کے لیے کی جانے والی کوششوں کے ساتھ ساتھ دنیا کو اس کے مختلف خزانوں سے متعارف کراتی ہے۔ فلم میں دکھائے جانے والے مقامات خوبصورتی،تنوع پودوں اور حیوانی زندگیوں سےبھرپور اور سعودی عرب میں اس قدرتی تنوع کی فراوانی کی عکاسی کرتی ہے۔

وزارتِ اطلاعات کے "ٹریژرز" اقدام کے ذریعے تیار کی گئی یہ فلم نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈویلپمنٹ کے ساتھ مل کرتیار کی گئی ہے۔ فلم میں ڈوگونگ یا متسیانگنا، ڈولفن، خوبصورت عرب چیتے، ہرن اور دیگر جانداروں کو شامل کیا گیا ہے۔ یہ فلم وژن 2030 کے پروگراموں اور مقاصد میں سے ایک ہے۔

اس فلم میں 10,000 سے زیادہ اقسام کی مخلوقات بھی دکھائی گئی ہیں جو سعودی عرب میں موجود ہیں، جن میں سے ہر ایک کو اپنے اردگرد کے ماحول کے مطابق بنایا گیا ہے۔ فلم کی شوٹنگ میں 200 دن سے زیادہ وقت لگا، جس میں 50 افراد کے خصوصی عملے نے شرکت کی۔ 28 مقامات پر فلم کے لیے 4,700 کلومیٹر سے زیادہ کا سفر کیا گیا۔ جنگلی حیات کے شعبے میں مہارت رکھنے والے 13 سعودی محققین نے شرکت کی

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں