ایکسپو 2030 کی تیاریاں جاری، سعودی ولی عہد اور عالمی بیورو کے سیکٹری نے جائزہ لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے ریاض میں انٹرنیشنل بیورو آف ایگزیبیشنز کے سیکرٹری جنرل دیمتری کرکینٹیز سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے سعودی عرب کی تیاریوں اور آلات کا جائزہ لیا گیا۔ یہ نمائش ایک منفرد پلیٹ فارم تشکیل دے رہی ہے۔ نمائش سب سے نمایاں اختراعات اور جدید ٹیکنالوجیز پیش کرے گی۔ مختلف شعبوں میں کرہ ارض کو درپیش رکاوٹوں پر قابو پانے کے حوالے سے بھی اہم کردار ادا کرے گی۔

"ایکسپو" کی میزبانی کے ذریعے ریاض شرکا اور لاکھوں زائرین کے لیے ایک غیر معمولی عالمی تجربہ فراہم کر رہا ہے۔ یہ نمائش کنگ سلمان انٹرنیشنل ایئرپورٹ جو اس وقت تیار کیا جا رہا ہے کے قریب منعقد کی جائے گی۔ اس سے ایئرپورٹ کے ذریعے آنے والے زائرین کے لیے چند منٹوں میں ریاض ٹرین نیٹ ورک کے ذریعہ نمائش تک پہنچنا آسان ہو جائے گا۔ یہ نیٹ ورک ریاض شہر کے تمام حصوں کا احاطہ کرتا ہے اور نمائش کے تین داخلی راستوں میں سے ایک سے جڑتا ہے۔

نمائش کے 226 پویلین کو ایک مشابہ ڈیزائن کیا گیا ہے۔ درمیان میں خط استوا ہے جو نمائش میں تمام شرکا کے لیے یکساں مواقع کی ضمانت دینے والے نقطہ نظر سے ہے۔ نمائش میں ملک کے پویلین کے مقامات کا تعین ہر ملک کے طول البلد کے مطابق لچکدار انداز میں کیا جائے گا۔ اس میں شمالی کرہ اور جنوبی کرہ کے ممالک کو اکٹھا کیا جائے گا۔ یہ ڈیزائن زائرین کے لیے بہت کم فاصلے تک پیدل چلنے کے لیے بھی بنایا گیا۔ اس ڈیزائن سے پویلین، عوامی چوکوں، مخصوص سہولیات کے درمیان راستے آسان ہو جاتے ہیں۔

ریاض کی تاریخ سے متاثر آرکیٹیکچرل ورثہ کے ڈیزائن کے ساتھ مکمل سایہ دار راہداریاں بنائی گئی ہیں۔ ثقافت اور اختراعات، اور کھانے کی خدمات کی سہولیات بھی کی گئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں