غزہ میں اسرائیلی جنگ سے فلسطینی معیشت سکڑ کر رہ گئی ، مہنگائی میں اضافہ : اقوام متحدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام نے کہا ہے کہ غزہ میں جاری اسرائیلی جنگ سے غربت کی شرح میں اضافہ ہوا ہے۔ جبکہ فلسطینی معیشت 26.9 فیصد تک سکڑ گئی ہے۔

ترقیاتی پروگرام کی جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ فلسطین میں غربت کی شرح 58.4 فیصد تک بڑھی ہے۔

سربراہ ترقیاتی پروگرام اچیم سٹینر نے کہا ہے 'غزہ میں جاری اسرائیلی جنگ کے ہر گزرتے دن کے ساتھ فلسطینیوں کو بھاری قیمت ادا کرنا پڑتی ہے۔ تازہ اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ غزہ کے فلسطینیوں کی مشکلات اس وقت تک ختم نہیں ہوں گی جب تک کہ اسرائیلی جنگ ختم نہیں ہوتی ہے۔'

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام کی جائزہ رپورٹ میں کہا گیا ہے 'اسرائیلی جنگ جو سات ماہ سے جاری ہے۔ اگر یہ جنگ نو ماہ تک جاری رہتی ہے تو فلسطین میں غربت کی سطح جنگ سے پہلے کے مقابلے میں دو گنا ہونے کا امکان ہے۔

اپریل میں شائع ہونے والی عالمی بینک کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غزہ میں جاری اسرائیلی جنگ سے انفراسٹرکچر کو تقریباً 18.5 ارب ڈالر کا نقصان پہنچا ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں