یروشلم : ہزاروں عیسائیوں نے چراغاں کیا، اسرائیلی پولیس نے نگرانی فراہم کی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایسٹر سے ایک روز پہلے ہزاروں آرتھو ڈاکس عیسائیوں نے یروشلم میں بتایا ہے کہ عیسائیوں کے نے مذہبی تہوار ایسٹر سے پہلے ہفتے کے روز یروشلم میں مقدس چراغاں کی تقریب کا انعقاد کیا۔ اس موقع پر اسرائیلی پولیس نے سخت حفاظتی اقدامات کیے تھے۔ اس سے پہلے کرسمس کے موقع پر کوئی رونق نہیں تھی مگر اب ایسٹر سے پہلے کی اس مذہبی سرگرمی کے لیے غیر معمولی اہتمام تھا اور پرانے شہریروشلم کی گلیاں عیسائیوں سے بھری نظر آرہی تھیں۔

کئی گھنٹوں تک عیسائی کمیونٹی کے لوگوں نے چراغاں کرنے کے لیے انتطار کیا ور پھر مقدس بتیاں روشن کردیں۔ اس کے لیے عیسائی لوگ کھڑکیوں کے پاس کھڑے تھے۔ اس سرگرمی کو سالہا سال سے ' ہولی سپیلچر چرچ ' کانام دیا جاتا ہے۔

روایت یہ ہے کہ یونانی آرتھو ڈاکس پیٹریارک تھیوفیلس نے چرچ کے اندر اور باہر موجود ہزاروں افراد کو بتیاں روشن کرنے کا کہا اور اس کے ساتھ ہی ہر طرف روشنیاں پھیل گئیں۔ اس عیسائی تقریب کو ایک پر اسرار اقدام کے طور دیکھا جاتا ہے۔ جس کا اہتمام ہر سال یروشلم میں کیا جاتا ہے جہاں کے بارے میں خیال رہے عیسائی مذہب کے ان لوگوں کے مطابق حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی قبراس جگہ ہے۔

اس موقع پر ہر سال ہزاروں مسیحی اس جگہ جمع ہوتے ہیں۔ یہ ہولی سیپلچلر چرچ کے مرکز میں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں