اسرائیلی فوج کی رفح پر بمباری ، 19 فلسطینی جاں بحق ہو گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی بمباری سے رفح میں 19 فلسطینی ہلاک ہو گئے ہیں ۔ اسرائیلی فوج نے رفح پر یہ بمباری اتوار کے روز کی اور دو مختلف مقامات پر دو الگ الگ مکانوں کو نشانہ بنتے ہوئے کی ہے۔ اسرائیلی بمباری سے ہونے والی نئی ہلاکتوں کی غزہ میں قائم وزارت صحت نے تصدیق بھی کر دی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ اتوار کے روز اسرائیلی فوج نے پہلی بمباری اس وقت کی جب فلسطینی مزاحمتی گروپ حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈ نے کرم شالوم راہداری میں اسرائیلی فوجیوں کو نشانہ بناتے ہوئے تین کو ہلاک کرنے کی ذمہ داری قبول کر لی۔

اس کے کچھ ہی دیر بعد اسرائیلی فوج نے رفح پر بمباری کرتے ہوئے ایک مکان کو نشانہ بنایا اور تین فلسطینی اہل خانہ کو ہلاک کرنے کے علاوہ متعداد افراد کو زخمی کر دیا۔ بعد ازاں اسرائیلی فوج نے اپنے اس حملے کو جوابی کارروائی قرار دیا اور کہا کہ کرم شالوم راہداری میں تین اسرائیلی فوجیوں کی ہلاکت کا بدلہ لیا گیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا تھا کہ فوج نے اس بمباری کے نتیجے میں اس جگہ کو نشانہ بنایا یہے جو راکٹ لانچنگ کے لیے استعمال کی گئی تھی۔ اس لیے اس لانچنگ پیڈ اور اس کے ساتھ ہی واقع حماس کے انفراسٹرکچر کو بھی نقصان پہنچانے کا دعویٰ کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کی طرف سے دوسری بار اتوار ہی کے روز رفح پر کی گئی بمباری رات کے وقت کی گئی ۔ یہ تقریبا نصف شب کا وقت تھا۔ جب اسرائیلی بمباری کا کی گئی اور کم از کم نو فلسطینی ہلاک کر دیے۔ رفح پر بمباری کے دونوں واقعات اتوار کے روز ہی پیش آئے ہیں ۔

تاہم پیر کے روز فلسطینی وزارت صحت نے دو بار کی گئی اس بمباری کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونون واقعات میں مجموعی طور 19 افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔
یاد رہے اتوار ہی کے روز غزہ میں فلسطینی وزارت صحت نے سات ماہ کی اسرائیلی جنگ کے دوران اب تک کل فلسطینی شہریوں کی ہلاکتوں سے متعلق اعدادو شمار جاری کرتے ہوئے بتایا تھا کہ اب تک 34683 فلسطینی جاں بحق ہو گئے ہیں۔ ان رفح میں ہونے والی تازہ فلسطینی ہلاکتوں کو بھی شامل کر لیا جائے تو یہ مجموعی تعداد34700 سے متجاوز ہو گئی ہے

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں