رفح آپریشن محدود مقصد حماس پر دباؤ ڈالنا ہے:اسرائیلی ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کے "آئی 24" نیوز نے منگل کے روز ایک اسرائیلی ذریعے کے حوالے سے تصدیق کی کہ رفح میں فوجی آپریشن بہت محدود ہے اور اس کا مقصد حماس پر جنگ بندی کے معاہدے کو قبول کرنے کے لیے دباؤ ڈالنا ہے۔

اسرائیلی حکومت کے ترجمان نے کہا ہے کہ لڑائی کے خاتمے کا واحد راستہ یہ ہے کہ حماس ہتھیار ڈال دے اور یرغمالیوں کو رہا کرے۔

ایک سینیر اسرائیلی اہلکار نے کہا کہ ایک اسرائیلی وفد آنے والے گھنٹوں میں مصر کا دورہ کرے گا تاکہ اس امکان کا جائزہ لیا جا سکے کہ حماس جنگ بندی کی تجویز کے بارے میں اپنا موقف بدل سکتی ہےیا نہیں۔

انہوں نے رائیٹرز کو مزید کہا کہ "یہ وفد درمیانے درجے کے سفیروں پرمشتمل ہے اگر مستقبل قریب میں کوئی حقیقی معاہدہ طے پا جاتا ہے تو سینئر حکام وفد کی سربراہی کریں گے"۔

اہلکار نے وضاحت کی کہ حماس کی جانب سے موجودہ پیشکش اسرائیل کے لیے ناقابل قبول ہے۔

پیر کی شام اسرائیلی دفاعی کابینہ نے متفقہ طور پر رفح میں فوجی آپریشن جاری رکھنے کا فیصلہ کیا، جب حماس نے مصر اور قطر کی جانب سے جنگ بندی کی تجویز کو قبول کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں