یو اے ای کا فلسطینی ریاست کو یو این کی رکنیت دینے کی قرارداد منظوری کا خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں فلسطینی ریاست کی یو این او کی مکمل رکنیت کے حق میں قرار داد کی منظوری کا خیر مقدم کیا ہے۔

امارات کی طرف سے کہا گیا ہے یہ اس دیرینہ تنازعے کے حل کے لیے تاریخی قدم ہے۔ اس فیصلے سے خطے میں امن اور مسئلے کے دو ریاستی حل می طرف پیش رفت ہو گی۔

خیال رہے جمعہ کے روز جنرل اسمبلی کے 193 ارکان میں سے 143 ارکان نے فلسطینی ریاست کو مکمل رکنیت دینے کے حق میں پیش کردہ قرار داد کی حمایت میں ووٹ دیا۔

اس قرار داد میں سلامتی کونسل سے بھی سفارش کی گئی ہے کہ وہ فلسطینی ریاست کی مکمل رکنیت کی منظوری کے لیے از سر نو اپنی ذمہ داری کو دیکھے اور فلسطین کے حق کے لیے خیر خواہی پر مبنی کردار ادا کرے۔

سلامتی کونسل نے ماہ مارچ میں فلسطینی اتھارٹی کی درخواست پر ووٹنگ کی اور کثرت رائے سے قرار داد کو منظور کرنے کی حمایت کی مگر امریکہ نے اسے ویٹو کر کے یہ کوشش ناکام بنا دى۔ اس کے بعد جنرل اسمبلی نے اسی قرارداد کو کچھ اضافے اور کمی کے ساتھ دوبارہ سے اپنے ہاں ووٹنگ کے لیے قبول کر لیا۔ جس کا فیصلہ جمعہ کے روز ہو گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے دیگر ملکوں کی طرح جنرل اسمبلی میں بھی مثبت کردار ادا کیا اور اس قرارداد کی حمایت کی۔ متحدہ عرب امارات نے کہا کہ فلسطین اقوام متحدہ کی پوری ممبر شپ کا حق دار ہے۔ نیز امن و انصاف کی بالادستی کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری کر رہا ہے۔ خود مختار اور آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کے لیے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق عملدرآمد ضروری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں