عالمی ڈونرز کے غزہ کے لیے دو بلین ڈالرسے زائد کی امداد کے وعدے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

کویت میں بین الاقوامی عطیہ دہندگان کی ایک کانفرنس میں اتوار کو غزہ کے لیے 2 بلین ڈالر سے زیادہ کی امداد کا وعدہ کیا گیا جبکہ اقوامِ متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے اسرائیل اور حماس کی جنگ میں "فوری" جنگ بندی کا مطالبہ کیا۔

انٹرنیشنل اسلامک چیریٹیبل آرگنائزیشن (آئی آئی سی او) اور اقوام متحدہ کے انسانی رابطہ کاری کے ادارے او سی ایچ اے کے زیرِ اہتمام ہونے والی کانفرنس میں کہا گیا ہے کہ فنڈز دو سالوں میں تقسیم کیے جائیں گے اور اس مدت میں توسیع کا امکان ہو گا۔

آئی آئی سی او کے جنرل منیجر بدر سعود الصمیط نے کہا، اس اقدام کو "غزہ کی پٹی میں زندگی بچانے والی انسانی مداخلتوں میں مدد کے لیے کوششوں کو متحرک کرنے اور آبادی کی جلد بحالی کے امکانات کو سہارا دینے کے لیے" ڈیزائن کیا گیا ہے۔

الصمیط نے کانفرنس کا حتمی بیان پڑھتے ہوئے کہا، "اس کا اطلاق پانچ مختلف امور پر کیا جائے گا -- "زندگی بچانے والی مداخلتیں، پناہ گاہ، صحت، تعلیم، اور اقتصادی طور پر بااختیار بنانا۔"

گوتیرس نے جنگ کو فوری طور پر روکنے، غزہ میں قید یرغمالیوں کی واپسی اور محصور فلسطینی علاقے میں انسانی امداد میں "اضافے" پر زور دیا۔

انہوں نے ایک ویڈیو خطاب میں کہا، "میں اپنے مطالبے کو، دنیا کے مطالبے کو دہراتا ہوں کہ فوری طور پر انسانی بنیادوں پر جنگ بندی، تمام مغویوں کی غیر مشروط رہائی اور انسانی امداد میں فوری اضافہ کیا جائے۔"

انہوں نے مزید کہا، "لیکن جنگ بندی صرف ابتدا ہوگی۔ اس جنگ کی تباہی اور صدمے سے واپسی کے لیے ایک طویل راستہ طے کرنا ہو گا۔"

غزہ پر اسرائیلی حملے اتوار کو جاری رہے جب شہر کے مشرقی علاقوں میں فوجی مداخلت پر بین الاقوامی مخالفت کے باوجود اس نے رفح کے لیے انخلاء کے حکم میں توسیع کی جس سے ایک اہم امدادی گذرگاہ مؤثر طور پر بند ہو گئی۔

گوٹیرس نے کہا، "غزہ میں جنگ خوفناک انسانی مصائب، زندگیوں کی تباہی اور خاندانوں کو جدا کر دینے کا سبب بن رہی ہے اور بڑی تعداد میں لوگوں کو بے گھر، بھوکا اور صدمے کا شکار بنا رہی ہے۔"

امیرِ کویت شیخ مشعل الاحمد الصباح سے ملاقات کرتے ہوئے اقوامِ متحدہ کے سربراہ نے "اقوامِ متحدہ اور بالخصوص غزہ میں ہلاک شدہ اقوامِ متحدہ کے تقریباً 200 اراکین کی جانب سے" اعزازی شیلڈ قبول کی۔

نیروبی میں جمعے کے روز گوتیرس نے خبردار کیا کہ اگر اسرائیل نے رفح میں مکمل زمینی کارروائی شروع کی تو غزہ کو "انتہائی درجے کی انسانی تباہی" کا سامنا کرنا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں