غزہ میں ہلاک ہونے والوں میں نصف تعداد جنگجووں کی ہے: نیتن یاہو کا دعوی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

انسانی حقوق اور جنگی قوانین کے سنگین خلاف ورزیوں کے ساتھ ساتھ غزہ میں فلسطینی بچوں اور عورتوں کی ہلاکتوں کی خبروں پر آجکل عالمی دباؤ میں آئے اسرائیل نے دعوی کیا ہے کہ کل ہلاکتوں میں نصف تعداد حماس کے عسکری ونگ سے وابستہ جنگجووں کی ہے۔ اس امر کا دعوی وزیر اعظم نیتن یاہو نے پوڈ کاسٹ انٹرویو میں کیا ہے۔

نیتن یاہو نے یہ بھی کہا کہ' فلسطینی وزارت صحت کی طرف سے غزہ میں اسرائیلی فوج کی بمباری یا گولہ باری سے سات ماہ کے دوران ہلاکتوں کی تعداد 35 ہزار سے زیادہ نہیں بلکہ یہ تعداد کئی ہزار کم ہے۔ جو نیتن ہاہو کے مطابق کل ہلاکتوں کی مجموعی تعداد یہ لگ بھگ تیس ہزار ہے۔ ان کے بقول ہلاکتوں کی یہ تعداد تیس ہزار کے لگ بھگ ہے۔

انہوں نے کہا ' نہ صرف فلسطینی وزارت صحت کی طرف سے پیش کی گئی ہلاکتوں کی تعداد زیادہ بتائی یے لیکن جنگجووں کی ہلاکت کا بتایا ہی نہیں ہے۔ '

تاہم دلچسپ بات ہے کہ نیتن یاہو یا ان کی حکومت جس نے اعداد و شمار کے بارے میں کئی ماہ تک چلائی گئی ان اسراییلی ہلاکتوں کو ہی خود غلط اعدادوشمار پر مبنی قرار دے دیا تھا اب غزہ میں جنگجووں اور شہریوں کی ہلاکتوں کے تناسب کے لیے کوئی استدلال یا منطق پیش کیا ہے نہ کوئی واقعات یا دستاویزی شہادت پیش کی ہے۔ البتہ یہ دعوی کر دیا ہے کہ غزہ میں ہلاک ہونے والوں میں نصف تعداد جنگجووں کی ہے۔

ادھر اقوام متحدہ اور دوسرے بین الاقوامی ادارے انہی اعدادو شمار کو درست مانتے ہیں جو فلسطینی وزارت صحت کے بیان کردہ ہیں۔ نیز یہ کہ وہ اسرائیلی فوج کے ہاتھوں بہت بڑی تعداد میں ہلاکتوں خصوصا عورتوں اور بچوں کی ہلاکتوں پر گہری تشویش بھی ظاہر کرتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق چیف وولکرترک نے خبر دار کیا کیا ہے کہ بچے اس غزہ جنگ کی بڑی بھاری قیمت اپنی جانوں کی صورت پیش کر رہے ہیں۔

مگر نیتن یاہو نے پوڈ کاسٹ انٹرویو میں اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا' اسرائیل اس پوزیشن میں ہے کہ فلسطینی شہریوں کی ہلاکتوں اور جنگجووں کی ہلاکتوں کو الگ الگ بیان کر سکے اور اور ان میں فرق کو برقرار رکھ سکے۔ یہ تناسب یاہو کے بقول ایک شہری کے مقابلے میں ایک جنگجو کا ہے۔ اب تک 16000 فلسطینی شہری ہلاک ہوئے ہیں اور 14000 جنگجو ہلاک کیے ہیں۔'

نیتن یاہو نے ماہ مارچ میں پولٹیکو کو دیے گئے ایک انٹرویو میں بھی تقریبآ یہی اعدادو شمار دیے تھے۔ اس وقت وزارت صحت غزہ نے کل ہلاکتوں کی تعداد 31045 بتائی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں

  • مطالعہ موڈ چلائیں
    100% Font Size