'بلا اجازت حج نہیں'، ضوابط پر سختی سے عمل درآمد کیا جائے گا:ڈپٹی گورنر مکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

مکہ مکرمہ ریجن کے نائب گورنر اور مرکزی حج کمیشن کے وائس چیئرمین شہزادہ سعود بن مشعل بن عبدالعزیز نے زور دے کر کہا ہے کہ اجازت نامہ حاصل کیے بغیر حج نہیں ہو سکتا اوراس حوالے سے ہدایات کی خلاف ورزی کرنے والوں سےسختی سےنمٹا جائے گا اور ضوابط پر سختی سے عمل درآمد کیا جائے گا۔

انہوں نے یہ بات خادم حرمین شریفین کے مشیر مکہ معظمہ کےگورنر شہزادہ خالد بن فیصل بن عبدالعزیز کی موجودگی میں جدہ میں امارہ کے صدر دفتر میں مرکزی حج کمیشن کے چیئرمین کی جانب سے " حج عبادت اور مہذب رویہ ہے مہم اپنے سولہویں سیزن میں، بغیر پرمٹ کے حج نہیں" سلوگن کے تحت منعقدہ اجلاس سے خطاب میں کی۔ اس موقعے پر معزز شہزادے اور دیگر اعلیٰ حکام موجود تھے۔

کانفرنس کے دوران مکہ کے نائب امیر
کانفرنس کے دوران مکہ کے نائب امیر

انہوں نے نشاندہی کی کہ "حج ایک عبادت اور مہذب طرز عمل ہے۔ پرمٹ کے بغیر حج نہیں" مہم کا سولہویں سیزن میں آغاز اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ اس نے گذشتہ برسوں میں قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں سے سختی سے نمٹا ہے اور بلا اجازت حج کرنے یا اس میں مدد دینے والوں کے خلاف کامیاب اقدامات کیے ہیں۔اجازت کے بغیرمناسک حج انجام دینے کی کوشش نے خلاف ورزی کرنے والے رویے کو کم کرنے اور غیر قانونی رویے کی روک تھام میں بھی کردار ادا کیا۔ نظم وضبط کی سختی کی وجہ سے جعلی حج اسکیموں کو پھلنے پھولنے سے روکنے اور بغیر اجازت کےحج جیسے فریضے میں شامل ہونے والوں کی حوصلہ شکنی کی گئی۔

ضیوف الرحمان کے استقبال اور ان کی خدمت کے لیے تیار

شہزادہ سعود بن مشعل نے حج میں کام کرنے والے تمام شعبوں پر زور دیا کہ وہ رب العزت کی طرف سے اجر کی امید میں ضیوف الرحمٰن کے استقبال اور ان کی خدمت کے لیے ہم آہنگی اور تیاری کی سطح کو بلند کریں۔ حج کے حوالے سے سعودی قیادت نے جو ہدایات اور ضوابط وضع کیے ہیں ان پر عمل درآمد یقینی بنائیں۔

حج کے ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ کیسے نمٹا جائے کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ضابطوں اور ہدایات کا سختی سے خلاف ورزی کرنے والوں پر اطلاق کیا جائے گا۔

البسامی اپنی تقریر کے دوران
البسامی اپنی تقریر کے دوران

اجازت کے بغیر حج کرنا جائز نہیں

اجازت نامے کے بغیر حج کرنے کے جائز ہونے کے بیانات اور قانونی فتووں کے اجراء کے بارے میں شہزادہ سعود بن مشعل نے کہا کہ اس حوالے سے مملکت کے سینیر علماء کی کونسل سے رجوع کیا جائے۔ انہوں نے اس حوالے سے سینیر علما کونسل اس بیان کی تعریف کی کہ جس میں اس نے واضح طور پرکہا ہے کہ بغیر اجازت کے حج ناقابل قبول ہے۔ یہ فتویٰ اس جگہ کے تقدس اور مناسک کے تقدس کو مدنظر رکھتے ہوئے جاری کیا گیا۔ تاکہ مسلمان کواسلام کے پانچویں ستون کو سلامتی، سکون اور آسانی کے ساتھ ادا کر سکیں اور ساتھ ہی ساتھ ریاستی شعبوں کو خدمات کو بہتر بنانے کے قابل بنایا جا سکے۔

حج کانفرنس
حج کانفرنس

حج سکیورٹی فورسز کی تیاریاں

اس موقعے پرسعودی عرب کی پبلک سکیورٹی کے ڈائریکٹرلیفٹیننٹ جنرل محمد البسامی نے حج سیزن 1445ھ کے لیے تمام شعبوں میں حج سکیورٹی فورسز کی تیاری کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ حج سیزن کے دوران پبلک سکیورٹی پوری طرح الرٹ ہے تاکہ حج کے موقعے پر کسی قسم کی غیرقانونی سرگرمی کو روکا جا سکے اور عازمین کو مناسک کی ادائی کے دوران پرسکون اور پرامن ماحول فراہم کیا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ سکورٹی اہلکاروں نے پندرہ شوال کو مکہ کے داخلی راستوں کو کنٹرول کرنے کے لیے اپنی ذمہ داریاں شروع کیں اور خلاف ورزی کرنے والوں پر پوری توجہ مرکوز رکھی جائے گی اور ہم حج کے اجازت نامے کے بغیر میقات کو عبور کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔
انہوں نے کہا کہ پبلک سکیورٹی وزارت حج وعمرہ کے ساتھ مل کر عازمین کوایک کارڈ جاری کرےگی جس میں ان کے نام اور دیگر ضروری تفصیلات درج ہوں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں