قیدیوں کی رہائی کا واحد طریقہ السنوار کے گرد گھیرا تنگ کرنا ہے: اسرائیلی حکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے ذرائع کے حوالے سے ہفتے کے روز اطلاع دی ہے کہ غزہ میں زیر حراست افراد کی رہائی سے متعلق بات چیت ابھی تک تعطل کا شکار ہے لیکن ثالثوں کی جانب سے انہیں دوبارہ شروع کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

مذاکرات کی پیشرفت سے واقف حکام کا خیال ہے کہ غزہ میں حماس کے رہ نما یحییٰ السنوار پرکا گھیراؤ سخت کرنا ضروری ہے کیونکہ غزہ کی پٹی میں قیدیوں کی رہائی کے معاہدے میں پیش رفت حاصل کرنے کا یہی واحد راستہ ہے۔

اسرائیلی براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے مزید کہا کہ امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان جو کل اسرائیل پہنچیں گے اسرائیلی حکام کے ساتھ ملاقاتوں کے دوران زیر حراست افراد کی رہائی کے لیے کسی معاہدے تک پہنچنے پر بات کریں گے۔

رفح میں اسرائیلی فوجیوں کی ہلاکتیں

حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈز نے ہفتے کے روز اطلاع دی کہ اس کے جنگجو 15 اسرائیلی فوجیوں کو ہلاک کرنے میں کامیاب ہو گئے۔ یہ فوجی مشرقی رفح میں گھات لگا کرکئے گئے حملے میں مارے گئے۔

القسام نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کے ارکان نے ایک گھر کو نشانہ بنایا جس میں متعدد اسرائیلی فوجی موجود تھے۔ انہیں اینٹی پرسنل ڈیوائس کے ساتھ نشانہ بنایا گیا۔ پھر التنور محلے میں ان کے ساتھ ہلکی مشین گنوں اور دستی بموں سے جھڑپ ہوئی۔

قبل ازیں آج اسرائیلی فوج نے کہا کہ اس کی افواج نے فلسطینی اسلامی جہاد تحریک کے ایک سرکردہ رکن کو ہلاک کر دیا۔ اسرائیل کا دعویٰ ہے کہ مقتول کمانڈر رفح میں اسرائیلی فورسز پرحملوں کی منصوبہ بندی کر رہا تھا۔

اسرائیلی فوج کے ایک بیان میں وضاحت کی گئی ہے کہ اس کی افواج نے غزہ کی پٹی میں جبالیہ کے علاقے میں لڑائی جاری رکھی اور متعدد عسکریت پسندوں کو ہلاک کیا۔

غزہ میں امریکی ڈاکٹر

قبل ازیں وائٹ ہاؤس نے کہا ہے کہ امریکی طبی کارکنوں کا ایک گروپ غزہ کی پٹی کے اس ہسپتال سے نکل گیا ہے جس کا اسرائیلی فوج نے محاصرہ کرلیا تھا۔

پچھلے ہفتے رپورٹوں میں اشارہ دیا گیا تھا کہ اسرائیل کی جانب سے رفح بارڈر کراسنگ کو بند کرنے کے بعد امریکی ڈاکٹر غزہ چھوڑنے سے قاصر ہیں۔

ان میں امریکہ میں قائم فلسطینی امریکن میڈیکل سوسائٹی کے 10 ارکان بھی شامل ہیں جو جنوبی غزہ کی پٹی میں رفح کے قریب واقع شہر خان یونس کے یورپی ہسپتال میں دو ہفتے کے مشن کے بعد روانہ ہونے کا ارادہ کر رہے تھے۔

وائٹ ہاؤس کی قومی سلامتی کونسل کے ترجمان جان کربی نے صحافیوں کو بتایا کہ جمعہ کو 20 میں سے 17 امریکی ڈاکٹر اور صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکن غزہ سے روانہ ہوئے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے رائیٹرز کو بتایا کہ پھنسے ہوئے کچھ ڈاکٹروں نے یروشلم میں امریکی سفارتخانے کی مدد سے اپنی حفاظت کا راستہ بنایا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں