یمن میں المخا کے قریب پاناما کے پرچم بردار آئل ٹینکر پر حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی سکیورٹی فرم ایمبرے نے ہفتے کے روز کہا کہ یمن کے بحیرۂ احمر کے بندرگاہی شہر مُخا کے قریب خام تیل لے جانے والے پاناما کے پرچم بردار ٹینکر پر حملہ کیا گیا۔ عالمی سمندری حدود میں ہونے والا تازہ ترین واقعہ ہے جس میں حوثی مزاحمت کاروں نے فلسطینیوں سے اظہارِ یکجہتی کے لیے بحری جہازوں کو نشانہ بنایا ہے۔

ایمبرے نے کہا کہ ایک ریڈیو مواصلات نے اشارہ دیا کہ ایک میزائل جہاز سے ٹکرایا اور مخا کے جنوب مغرب میں تقریبا 10 سمندری میل کے فاصلے پر جہاز کو آگ لگ گئی۔ ایمبرے نے زیادہ تفصیلات بتائے بغیر موصولہ معلومات کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ جہاز کو مدد ملی تھی اور اس کا ایک سٹیئرنگ یونٹ کام کر رہا تھا۔

ایمبرے نے ایک مشاورتی نوٹ میں مزید کہا کہ دیگر قریبی جہازوں کو احتیاط برتنے کا مشورہ دیا گیا۔

علیحدہ طور پر برطانیہ کی میری ٹائم ٹریڈ آپریشنز (یو کے ایم ٹی او) ایجنسی نے ہفتے کے روز کے اوائل میں کہا تھا کہ بحیرۂ احمر میں ایک بحری جہاز سے کوئی نامعلوم چیز ٹکرائی اور اسے معمولی نقصان پہنچا تھا۔

یو کے ایم ٹی او نے یمن کی الحدیدہ بندرگاہ کے جنوب میں 98 سمندری میل کے فاصلے پر پیش آنے والے اس واقعے پر ایک مشاورتی نوٹ میں کہا، "بحری جہاز اور عملہ محفوظ ہیں اور اپنی اگلی بندرگاہ کی طرف جا رہے ہیں۔"

امریکہ اور برطانیہ نے بحری جہازوں پر حملوں کے جواب میں حوثیوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں