اسرائیل نے رفح پر حملے کے اگلے مرحلے کی تفصیلات امریکہ سے شیئرکر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے غزہ کی پٹی کے انتہائی جنوبی شہر رفح پرحملے کے بارے میں تمام بین الاقوامی انتباہات خاص طور پر امریکی وارننگ کے باوجود معلوم ہوا ہے کہ اسرائیل نے رفح پرحملے کے اگلے مرحلے کی منظوری دے دی ہے۔ اس منصوبے کے بارے میں امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان کو بھی مطلع کیا گیا ہے۔

العربیہ چینل کے نامہ نگار نے بتایا کہ جیک سلیوان آج اتوا کو تل ابیب پہنچے تھے۔ ان کی آمد سے قبل اسرائیلی وزیر دفاع یوآو گیلنٹ اور چیف آف اسٹاف ہرزی ہیلیوی نے رفح کے اگلے مرحلے کے حملے ی منظوری دی۔

انہوں نے کہا کہ توقع ہے کہ اسرائیلی حکومت کی سرگرمیوں کے ملٹری کوآرڈینیٹر حکمت عملی کے شعبے کے سربراہ اور اسرائیلی فوج میں آپریشن کے شعبے کے سربراہ آج اتوار کو سلیوان کے سامنے اگلے مرحلے کی نوعیت کی تفصیلات پیش کریں گے۔

وسیع پیمانے پر حملہ

یہ پیش رفت وائٹ ہاؤس کی جانب سے پہلے اعلان کیے جانے کے بعد سامنے آئی ہے کہ سلیوان آج اسرائیلیوں کے ساتھ بات چیت کریں گے اور حماس کے عسکریت پسندوں کے خلاف سرجیکل اسٹرائیک کے انداز میں تعاقب کرنے کی ضرورت پر زور دیں گے۔ وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ جیک سلیوان رفح پر اسرائیل کے وسیع تر حملے کی مخالفت کریں گے۔

رفح میں بے گھر افراد
رفح میں بے گھر افراد

قابل ذکر ہے کہ رفح حملے کے معاملے نے غزہ کی پٹی سے متصل مصر کی قیادت میں کئی مغربی اور عرب ممالک کے غصے کو جنم دیا تھا۔

واشنگٹن اور تل ابیب کے درمیان تناؤ بھی غیر معمولی انداز میں بڑھ گیا اور گذشتہ ہفتے امریکی صدر نے اسلحے کی اس کھیپ کو معطل کرنا پڑا تھا جسے اسرائیل کو بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

تاہم اسرائیلی وزیر اعظم نے "رفح ایکش" پر عمل کیا جیسا کہ انہوں نے بیانات میں بار بار دعویٰ کیا تھا۔ انہوں نے رفح پر دو ہفتے قبل چڑھائی کی اور مصر سے منسلک رفح کی واحد گذرگاہ پر قبضہ کرلیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں