لبنان میں ترک اسلحے سے بھرےٹرک کے پکڑے جانے پرنیا طوفان برپا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان میں ان دنوں تُرکیہ کے اسلحے کی کھیپ کے پکڑے جانے پرایک نئے تنازعے نے جنم لیا ہے۔

دو روز قبل لبنان کی طرابلس بندرگاہ سےآنے والے متعدد ٹرکوں کو روکا گیا جن کے بارے میں کہا گیا تھا ان پر سورج مکھی کا تیل لادا گیا ہے۔ بعد میں معلوم ہوا کہ ان میں تُرک فوجی پستول چھپائے گئے تھے۔

704 فوجی پستول قبضے میں لے لیے گئے

فوج نے دو ٹرکوں میں 704 اسمگل شدہ فوجی پستول قبضے میں لینے کا اعلان کیا جو ایک جہاز پر طرابلس کی بندرگاہ پر پہنچائے گئے تھے۔

طرابلس کی بندرگاہ سے، شمالی لبنان
طرابلس کی بندرگاہ سے، شمالی لبنان

دو ٹرکوں میں سے ایک میں شمالی بیروت کی طرف جاتے ہوئے برقی شارٹ میں کی وجہ سے آگ لگنے کے بعد انکشاف ہوا کہ اس میں انجن کے اوپر چھپائی گئی 304 سمگل شدہ پستولیں لدی ہوئی تھیں۔

دریں اثنا انٹیلی جنس نے اسمگلنگ کی کارروائی میں ملوث ہونے کے شبہ میں متعدد افراد کو گرفتار کیا ہے۔

ترکیہ میں فلسطینی ہتھیار

اس تناظر میں باخبر سکیورٹی ذرائع نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ ‘ اور الحدث ڈاٹ نیٹ کو وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ لبنانی فوج کی جانب سے کی گئی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ جن ٹرکوں میں ترک پستول قبضے میں لیے گئے تھے ان کا تعلق فلسطینی خاندان ’ح‘ سے تھا۔ یہ فلسطینی عین الدلب کے علاقے میں دمیہ ومیہ کیمپ میں رہتا ہے، لیکن اب یہ ترکیہ میں مقیم ہے۔"

طرابلس کی بندرگاہ سے، شمالی لبنان
طرابلس کی بندرگاہ سے، شمالی لبنان

اس نے "مذکورہ بالا فلسطینی نے ترکیہ میں رابطہ کرنے کے بعد پستول والے ٹرک کے ساتھ اپنے تعلق کی تردید کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ دوسرے ٹرک کے ڈرائیور سے تفتیش جاری ہے جسے فوج نے طرابلس کی بندرگاہ میں معائنہ کے دوران پکڑا تھا اور وہ ترک شہریت کا حامل ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں