سعودی عرب کی فلسطینی عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے اردنی ایئر ڈراپ میں معاونت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی طرف سے غزہ کی پٹی میں جنگ سے متاثرہ فلسطینی بھائیوں کی مدد کی خاطر اردن کی طرف سے شروع کیے گئے’ایئر ڈراپ‘ آپریشن میں ہرممکن تعاون فراہم کرنے کی کوششیں جاری رکھی ہیں۔

سعودی عرب کے کنگ سلمان ہیومینٹیرین ایڈ اینڈ ریلیف سینٹرنے اردن کی ہاشمی سلطنت کو ’ایئر ڈراپ‘ کے لیے سازوسامان اور آلات فراہم کیے۔ تاکہ اردن کی ہاشمی خیراتی آرگنائزیشن اسے اردن کی ہاشمی مسلح افواج "عرب فوج" کومہیا کرے۔ یہ اقدام اردن کی طرف سے غزہ کی پٹی میں انسانی ہمدردی کی صورتحال کی سنگینی کو کم کرنے کے لیے امداد پہنچانے کی کوششوں کا حصہ ہے۔

اس امدادی سامان کے لیے 30 ٹن وزنی انسانی امداد کے ایئر ڈراپ آپریشنز کے لیے نامزد کردہ پیراشوٹ اور جالوں کی فراہمی شامل ہے۔ اردن میں شاہ سلمان ہیومینٹیرین ایڈ اینڈ ریلیف سینٹر برانچ کے ڈائریکٹر نائف الشمری نے کہا کہ شاہ سلمان ریلیف مرکز نے انسانی ہمدردی کی ایجنسیوں کے ساتھ مل کر ایئرڈراپ آپریشن میں ہرممکن تعاون کی فراہمی کا سلسلہ جاری رکھا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اپنے انسانی ریلیف ونگ کنگ سلمان ریلیف سینٹر کے ذریعے غزہ کی پٹی میں فلسطینی عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی سعودی عوامی مہم کے ایک حصے کے طور پر زمینی، سمندری اور فضائی پلوں کے ذریعے مدد فراہم کر رہا ہے۔

یہ پیش رفت سعودی عرب کی حکومت کی طرف سے غزہ کی پٹی کے متاثرہ علاقوں تک مختلف ممکنہ طریقوں سے فوری انسانی امداد پہنچانے کی مساعی کی توسیع کے طور پر سامنے آئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں