28 سالہ اسرائیلی یرغمالی کی اسلامی جہاد گروپ نے ویڈیو جاری کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی مزاحمتی گروپ اسلامی جہاد نے منگل کے روز اپنی قید میں موجود ایک اسرائیلی یرغمالی کی ویڈیو جاری کی ہے۔ ویڈیو میں دیکھا گیا اسرائیلی یرغمالی زندہ ہے اور اسے بظاہر غزہ میں رکھا گیا ہے۔

اسرائیل نے اس ویڈیو میں دکھائے گئے یرغمالی کی شناخت ساشا ترپانوو بتائی ہے۔ 28 سالہ یر غمالی میں ویڈیو میں 30 سیکنڈ کے لیے عبرانی زبان بولتا دکھیا گیا ہے۔

اسلامی جہاد کی جاری کردہ ویڈیو میں یرغمالی کو ایک ٹی شرٹ میں ملبوس دکھایا گیا ہے، تاہم یہ واضح نہیں ہو سکا کہ یہ فوٹیج کب بنائی گئی ۔

بتایا گیا ہے کہ یہ یرغمالی روسی نژاد اسرائیلی شہری ہے۔ اسے سات اکتوبر کو کبوتز نیر اوز سے اٹھایاگیا تھا اس کے ساتھ اس کی والدہ کو بھی غزہ لے جایا گیا تھا۔ حتٰی کے اس کی دادی اور اس کی گرل فرینڈ بھی شامل تھی۔

تاہم اس کی ساتھی تینوں خواتین کو ماہ نومبر میں ہی رہا کر دیا گیا تھا ، جب اسرائیل اور حماس کے درمیان ایک معاہدے کے تحت یرغمالیوں کی رہائی اور عارضی جنگ بندی ہوئی تھی۔

ابھی تک ایک سو کے لگ بھگ اسرائیلی یرغمالی غزہ میں قید ہیں۔ تقریباً پونے آٹھ ماہ کی جنگ کے دوران اسرائیلی فوج اپنی جنگی قوت کے بل بوتے پر ایک بھی یرغمالی رہا نہیں سکی ہے۔

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے اب تک 36096 فلسطینیوں کو بمباری ، گولہ باری اور فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا ہے۔ جبکہ 80 ہزار سے زائد فلسطینی زخمی ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں