جنگ اس سال ختم نہیں ہوگی: اسرائیلی مشیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایسا لگتا ہے کہ مصر اور اسرائیل کے درمیان ہفتوں سے جاری کشیدگی جلد ختم نہیں ہوگی۔ دونوں اطراف کے سینئر حکام کے درمیان پرسکون بات چیت کے اعلان کے باوجود اسرائیل کے قومی سلامتی کے مشیر زاچی ہنیگبی نے اعلان کیا کہ اسرائیل کی فوج فلاڈیلفیا کوریڈور کے 75 فیصد حصے پر قابض ہے ہوگئی ہے۔ فلاڈیلفیا کوریڈور غزہ اور مصر کے درمیان بفر زون ہے۔

زاچی ہنیگبی نے مزید کہا کہ غزہ کے اندر اسرائیلی فوج اب فلاڈیلفیا کے 75 فیصد محور پر قابض ہے۔ اور وقت کے ساتھ سارے علاقے پر کنٹرول حاصل کرلیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ تل ابیب کو مصریوں کے ساتھ تعاون کرنا چاہیے تاکہ ہتھیاروں کی سمگلنگ کی روک تھام کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ غزہ میں لڑائی کم از کم 2024 تک جاری رہے گی۔

یہ اعلان گزشتہ چند دنوں کے دوران اسرائیل اور مصر کے درمیان تعلقات میں شدید کشیدگی کے بعد سامنے آیا ہے۔ پیر کو رفح کے علاقے میں سرحدی پٹی پر اسرائیلی فوج کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے کے بعد ایک مصری فوجی جاں بحق ہوگیا تھا۔ اس واقعے کے بعد ایک سکیورٹی ذریعے نے اطلاع دی کہ ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ اسرائیلی فورسز اور فلسطینی بندوق برداروں کے درمیان کئی سمتوں سے گولیاں چلی تھیں۔ جس کی وجہ سے مصری سکیورٹی اہلکاروں کو حفاظتی اقدامات کے طور پر فائرنگ کرنا پڑی تھی۔

انہوں نے فلاڈیلفیا کوریڈور جسے صلاح الدین روڈ بھی کہتے ہیں میں اسرائیلی فوجی کارروائیوں کے اثرات سے متعلق مصر کی بار بار کی وارننگ سے بھی خبردار کیا۔

واضح رہے ’’فلاڈیلفیا محور‘‘ یا "صلاح الدین محور" غزہ کی پٹی اور مصر کی سرحد کے ساتھ 14 کلومیٹر طویل علاقہ ہے۔ اسرائیلی فوج نے 7 مئی کو رفح میں آپریشن شروع کردیا تھا۔ یہ آپریشن تین ہفتوں سے زیادہ عرصہ سے جاری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں