ریاض ایئرعالمی سطح پر بڑی کمپنیوں کے لیے شراکت داری کے لیے تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی ملکیتی ریاض ایئر بین الاقوامی سطح پر اپنے توسیعی منصوبے کے تحت دوسری بڑی فضائی کمپنیوں کے ساتھ شراکت داری کے لیے تیار ہے۔ ریاض ائیر لائن سعودی عرب کی جدید ترین کمپنی ہے اور اگلے سال اپنی مارکیٹ کا دائرہ بڑھا رہا ہے۔

ریاض ایئر کے اس منصوبے سے آگاہ ذرائع کے مطابق ریاض ائیر جنوب مشرقی ایشیا کے ایک بڑے فضائی بیڑے کے ساتھ معاہدے کا اعلان قریب تر ہے۔

ریاض ایئر طویل فاصلے کی پروازوں کے اجرا کے علاوہ ایک امریکی ایئر لائن اور بھارتی کیریئر کے ساتھ معاہدوں کے لیے پراسس جاری ہے، تاہم ریاض ایئر کے حکام نے فی الحال اس بارے میں تبصرہ کرنے سے معذرت کی ہے۔

واضح رہے ریاض ایئر اگلے سال کے وسط میں اپنے وسیع تر منصوبے کے ساتھ شروعات کرنے کے لیے پوری دنیا میں اپنی پروازیں شروع کرنے جا رہی ہے۔ کمپنی کے اہداف میں اپنے دائرہ کار میں دوسری کمپنیوں کے ہاتھ چلائے گئے بزنس کو واپس لانے کے علاوہ علاقائی اور بین الاقوامی کیرئیرز کے ساتھ معاہدات بھی کرنا شامل ہے۔

ریاض ایئر کے ویژن میں یہ شامل ہے کہ مملکت 36 ملین سے زیادہ کی آبادی کا حامل ہے، جبکہ سعودی ویژن 2023 کے تحت سیاحت کو فروغ دینے کے منصوبوں کے نتیجے میں بھی سعودی عرب میں دنیا بھر سے آمدو رفت میں کے لیے منظم سہولت فراہم کرنا شامل ہے۔

اس سے قبل پچھلے سال کے دوران ریاض ایئر ترکیہ کی فضائی کمپنی ترکش ائیر لائنز کے ساتھ معاہدے کر چکی ہے۔

ریاض ایئر کے پاس اضافی 33 طیاروں کے ساتھ 39787 ڈالرز کے آرڈر ہیں۔ کیریئر تنگ باڈی کے ساتھ ساتھ اضافی وائیڈ باڈی جیٹوں کا آرڈر دینے کی بھی کوشش کر رہا ہے، کیونکہ وہ اپنی مختصر فاصلے کی خدمات کو بڑھانا چاہتا ہے

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں