سعودی عرب: 34 ملین ریال مالیت کے چیریٹی چیک میں جعلسازی کی پاداش میں شہری کو سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن کے نمائندہ ادارے پراسیکیوشن فار کرائمز برائے پبلک ٹرسٹ نے جعلسازی کے جرائم کے لیے تعزیری نظام کی خلاف ورزی کرنے کے الزام میں ایک شہری کے خلاف تفتیشی عمل شروع کیا ہے۔ ملزم کو عدالت کی طرف سے جعل سازی کے الزام میں تین سال قید اور تین لاکھ ریال جرمانہ کی سزا سنائی گئی ہے۔

خیراتی رقم کے جعلی چیک جاری کرنے کا الزام

تفتیش سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ملزم نے غیر منافع بخش تنظیم جو ایک خیراتی ادارہ ہے سے تعلق رکھنے والی ایک چیک بک غیر قانونی طور پر حاصل کی اور تین جعلی چیک بنائے جن پر 34 ملین ریال سے زیادہ کی رقم کیش کرانے کی کوشش کی مگر جعلی سازی میں دھر لیا گیا۔

ملزم نے جعل سازی کے ذریعے رقم حاصل کرنے کی کوشش کے دوران دعویٰ کیا کہ یہ رقم ایسوسی ایشن سے منسلک منصوبوں کی دیکھ بھال کے لیے جاری کی جا رہی ہے۔ اس نے جعل سازی کے لیے ایک جعلی دستاویز بنائی۔ تنظیم کے چیئرمین کے جعلی دستخط اور ایک جعلی مہربھی تیار کی۔

ملزم کو گرفتار کرکے مجاز عدالت میں پیش کیا گیا۔ اس پر فلاحی تنظیموں کے استحصال اور ان سے جھوٹ بولنے پر سخت سزا کی درخواست کی گئی۔ عدالت نے ملزم کو تین سال قید اور تین لاکھ ریال جرمانہ کی سزا سنائی گئی ہے۔

پبلک پراسیکیوشن کا انتباہ

پبلک پراسیکیوشن نے دستاویزات اور مہروں کے قانونی تحفظ پر زور دیا۔ اس نے واضح کیا کہ جعلسازی کی کسی بھی کوشش پر سخت سزا دی جائے گی اور کسی سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں