سعودی عرب میں عالمی یوم ماحولیات پر’انوائرمنٹ اکیڈمی کا قیام

اس اقدام سے ماحولیاتی شعبے میں خصوصی مراعات اور گرانٹس کے لیے ایک پروگرام شروع کرنے میں مدد ملے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب نے ماحولیات کے لیے قومی اکیڈمی کے قیام کا اعلان کیا ہے۔ اس ادارے کے قیام کا مقصد قومی اور بین الاقوامی اداروں کے ساتھ شراکت میں انسانی صلاحیتوں کو فروغ دینے اور ماحولیاتی شعبے کے لیے مراعات اور گرانٹس کے پروگرام میں حصہ ڈالنے، چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں، کمپنیوں، تحقیقی مراکز، یونیورسٹیوں اور غیر منافع بخش شعبے کی مدد کرکے سرمایہ کاری کے مواقع میں اضافہ کرنا ہے۔

مملکت میں ماحولیات پرتحقیق کے لیے اکیڈمی کے قیام کا اعلان دارالحکومت ریاض میں عالمی یوم ماحولیات برائے سال 2024ء کی تقریب کے دوران عمل میں لایا گیا۔ اس موقعے پر "ہماری سرزمین، ہماری مستقبل" کے عنوان سے تقریب کا انعقاد کیا گیا۔

سعودی عرب کے ماحولیات، پانی اور زراعت کے وزیر انجینیر عبدالرحمٰن الفضلی نے وضاحت کی کہ نیشنل انوائرمنٹ اکیڈمی کا آغاز جنرل کارپوریشن برائے تکنیکی اور پیشہ ورانہ تربیت کے نیشنل سینٹر فار سٹریٹجک پارٹنرشپس کے ساتھ انضمام میں ہوا ہے۔

اس اقدام کا مقصد قومی اور بین الاقوامی اداروں کے ساتھ شراکت میں قومی صلاحیتوں اور قابلیت میں سرمایہ کاری کرکے تعلیمی نتائج کو لیبر مارکیٹ کی ضروریات اور تقاضوں کے ساتھ ہم آہنگ کرتے ہوئے اختراعی اور ماحولیاتی انٹرپرینیورشپ کے کلچر کو فروغ دینا اور ماحولیاتی انسانی صلاحیتوں کی تعمیر میں تعاون کرنا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ مملکت میں ماحولیات کے شعبے میں مراعات اور گرانٹس کا پروگرام ماحولیات فنڈ کے ذریعے فراہم کیا جاتا ہے، جو ماحول دوست طریقوں کو فروغ دینے، تحقیق اور اختراع کی حمایت، ماحولیات اور موسمیات کے شعبوں میں سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرنے اور ماحولیاتی عزم کی سطح کو بلند کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اس پروگرام کے تحت ترقی کے شعبے، چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں، تحقیقی مراکز، یونیورسٹیوں، غیر منافع بخش شعبے اور دیگر شعبوں کو مراعات اور گرانٹ فراہم کی جاتی ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ عالمی یوم ماحولیات جس کی میزبانی اس سال مملکت نے کی تھی دنیا بھر میں 4 ہزار سے زیادہ مختلف ماحولیاتی سرگرمیاں منائی گئیں کیونکہ یہ دن اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے قیام کے بعد سے ہر سال 5 جون کو منایا جاتا ہے۔ 1972ء میں بین الاقوامی یوم ماحولیات باقاعدی سے منایا جاتا ہے۔ گذشتہ پانچ دہائیوں کے دوران عالمی یوم ماحولیات کا جشن ماحولیاتی آگاہی کے لیے سب سے بڑے عالمی پلیٹ فارم میں سے ایک بن گیا ہے۔لاکھوں لوگ اس میں آن لائن اور سرگرمیوں کے ذریعے حصہ لیتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے ماحولیات کے پروگرام کی ڈائریکٹر انگر اینڈرسن نے زور دیا کہ دنیا بھر میں زمین کی خرابی دنیا بھر میں ذریعہ معاش اور خوراک کی حفاظت کو نقصان پہنچا رہی ہے۔ زمین کی بحالی، صحرا بندی کا مقابلہ کرنا، اور خشک سالی کے خلاف لچک پیدا کرنا بڑی حکمت عملیاں ہیں

اینڈرسن نے مزید کہا کہ عالمی یوم ماحولیات منانا اس میدان میں کی جانے والی مساعی کو تیز کرنے اور مثبت تبدیلی پیدا کرنے کا ایک اہم موقع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں