مقبوضہ مغربی کنارا ، امریکہ نے فلسطینی گروپ پر پابندیاں لگا دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکہ نے مغربی کنارے میں موجود مزاحمتی فلسطینی گروپ ' شیروں کی کچھار ' پر پابندیاں لگانے کا اعلان کیا ہے۔ اس گروپ کو مقبوضہ مغربی کنارے میں عسکری گروپ کے طور اسرائیلی فوج کے خلاف مسلح کارروائیوں میں ملوث سمجھا جاتا ہے۔

پچھلے دو سال سے اس کی طرف سے مبینہ عسکری کارروائیوں کی ایک سیریز دیکھی گئی ہے۔

یہ گروپ شیروں کی کچھار نابلس شہر سے تعلق رکھتا ہے۔۔ اس پر الزام ہے کہ اس نے ستمبر 2022 سے کر اپریل 2024 تک ناجائز یہودی بستیوں ، اسرائیلی و فلسطینی سیکیورٹی فورس پر کیے ہیں۔

امریکی دفتر خارجہ کے ترجمان میتھیو ملر نے اس فلسطینی گروپ پر پابندیاں لگانے گا اعلآن گذشتہ روز کیا ہے۔ ملر کے مطابق آمریکہ ہر اسے گروہ کے احتساب کے لیے انہیں کٹہرے میں لائے گا جس سے بھی امن و استحکام کو خطرہ ہو گا۔

واضح رہے اقوام متحدہ نے اسی ہفتے کے اوائل میں کہا تھا کہ تقریباً آٹھ ماہ قبل جب سے غزہ میں جنگ شروع ہوئی ہے مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج، دیگر سکیورٹی فورسز اور یہودی آباد کاروں کے ہاتھوں کم از کم 505 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔ اقوام متحدہ کے مطابق، اسی عرصے کے دوران مغربی کنارے کی جھڑپوں یا علاقے سے فلسطینیوں کے مبینہ حملوں میں آٹھ فوجیوں سمیت دو درجن اسرائیلی بھی مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں