غزہ: واٹر پمپنگ سٹیشن پر بمباری، نصیرات کے میئر قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

وسطی غزہ کے شہر نصیرات کے میئر کو اسرائیلی فوج نے بمباری کر کے قتل کر دیا۔ نصیرات میونسپلٹی کے مئیر ایاد المغاری شہر کو پانی فراہم کرنے والے واٹر پمپمنگ سٹیشن کے دورے کے لیے آئے تھے کہ ان پر بمباری کر دی گئی، بمباری سے واٹر پمپنگ سٹیشن بھی تباہ ہو گیا۔

میونسپلٹی کے ترجمان کے مطابق یہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق ساڑھے دس بجے پیش آیا جب اسرائیلی فوج نے اس واٹر پمپنگ سٹیشن کو بمباری سے نشانہ بنایا۔ ترجمان محمد الصالحی نے بین الاقوامی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کو بتایا اس واقعے کے بعد میئر کی لاش کو قریبی نصیرات ہسپتال لایا گیا، جہاں شہریوں کی بڑی تعداد جمع ہو گئی۔

میونسپلٹی کے ترجمان نے کہا 'اسرائیلی فوج نے اس قدر بزدلانہ کارروائی کی اور پانی کی پمپنگ کرنے والے سٹیشن کو ہی بمباری سے تباہ کر دیا گیا۔ جبکہ ڈاکٹر ایاد المغاری کے ساتھ ان کے خاندان کے چار دوسرے افراد کو بھی قتل کر دیا گیا۔'

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے فوری طور پر اپنا رد عمل دینے کے بجائے 'اے ایف پی' سے کہا ہے کہ ہم جلد اس بارے میں بیان جاری کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔

موقع پر جانے والے اس کے نمائندے نے دیکھا واٹر پمپنگ سٹیشن کی عمارت تباہ ہوکر کنکریٹ کے ملبے میں ادارے تبدیل ہو چکی ہے۔ بجلی کی فراہمی سے متعلق وائرنگ اور دوسرا سامان ٹوٹ بکھر چکا ہے اور موقع پر خون گرا ہوا ہے۔

واٹر پمپنگ سٹیشن کے کارکن موقع پر پہنچ کر بڑے پائپوں کو پہنچنے والے نقصان کا اندازہ کر رہے تھے کہ کہ پانی کی سپلائی اب ان پائپوں سے ممکن ہو گی یا نہیں۔

ایک مقامی شخص ابراہیم نے کہا ' ہم دیکھ رہے تھے بمباری بالکل ہمارے سامنے ہو رہی تھی اور واٹر پمپنگ سٹیشن اس کا ہدف تھا۔' ابراہیم نامی شہری کہہ رہا تھا 'میں نے دیکھا یہ صرف ایک میزائل اتنی بڑی تباہی کر گیا۔ '

ادھر نصیرات ہسپتال میں میئر ایاد المغاری کی میت سفید رنگ کی ایک شیٹ میں لپٹی ہوئی تھی۔ ان کیا لاش نمایاں نظر آرہی تھی اور ایمبولینس میں رکھی گئی تھی۔

نصیرات کی میونسپلٹی نے میئر کی بمباری سے ہلاکت پر سوگ کا اعلان کیا ہے۔ اور انہیں خراج تحسین پیش کیا ہے کہ وہ ان جنگی حالات میں بھی عوام کی فراہمی آب کے لیے اس حد تک پیش پیش رہے کہ اسی دوران اپنی جان بھی دے دی۔ '

حماس کی غزہ حکومت نے بھی میئر نصیرات کے عوام کے لیے اخلاص اور خدمت کے جذبے کی تعریف کرتے ہوئے کہا وہ اپنے عوام اور وطن کی خدمت کے دوران شہید ہوئے ہیں۔

واضح رہے اب غزہ میں اسرائیلی جنگ آٹھ ماہ مکمل کر کے نویں ماہ میں داخل ہو چکی ہے، مگر اسرائیلی فوج کی بمباری ہے کہ اس میں ذرہ بھر کمی نہیں ہوئی ہے۔ اس دوران اب تک 36731 فلسطینی صرف غزہ کی پٹی پر شہید ہو چکے ہیں۔ جن میں بڑی تعداد فلسطینی بچوں، بچیوں اور خواتین کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں