اسرائیل نے غزہ سے ایک عورت سمیت چار یرغمالیوں کی بازیابی کی ویڈیو جاری کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ہفتے کے روز اسرائیلی فوج نے ایک ویڈیو کلپ نشر کیا ہے جس میں اس نے غزہ کی پٹی میں نصیرات کیمپ سے 4 اسرائیلی قیدیوں کی بازیابی کا منظر دکھایا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرعی نے ’ایکس‘ویب سائٹ پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے ایک ویڈیو کلپ شیئر کیا ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ اسرائیلی فورسز غزہ میں موجود قیدیوں کو ایک فوجی ہیلی کاپٹرکی طرف لے جا رہی ہیں۔

اویچائی نے اپنی پوسٹ میں کہا کہ "نصیرات کے قلب میں قیدیوں کی بازیابی کی ویڈیو کو ریکارڈ کیا گیا جس کے بعد ان چاروں افراد جن میں ایک عورت بھی شامل ہے کو فوجی ہیلی کاپٹر میں منتقل کردیا گیا‘‘۔

3 مرد اور ایک عورت

اسرائیلی فوج نے اعلان کیا ہے کہ فورسز نے ہفتے کے روز وسطی غزہ کی پٹی کے علاقے نصیرات میں دو مختلف مقامات سے 4 قیدیوں کو زندہ بچا لیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یرغمالیوں میں تین مرد اور ایک خاتون ہیں جنہیں حماس نے سات اکتوبر کو جنوبی اسرائیل میں نووا کنسرٹ سے اغوا کیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کی صحت اچھی ہے اور انہیں طبی معائنے کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

فوج نے رہائی پانے والے یرغمالیوں کی شناخت 25 سال وا ارگمانی ، 21 سالہ الموا میر،27 سالہ آندرے کوزلوف اور40 سالہ شلومی زیوکے ناموں سے کی ہے۔

آپریشن میں 210 فلسطینی مارے گئے مگر اسرائیل کا 100 فلسطینیوں کی ہلاکت کا دعویٰ

غزہ کی پٹی میں سرکاری میڈیا کے دفتر کے مطابق ہفتے کوایک بیان میں کہا کہ اسرائیلی فوج نے وسطی غزہ کے علاقے نصیرات میں متعدد اہداف پر حملے کیے، جن کےنتیجے میں کم از کم 210 فلسطینی ہلاک اور 400 کے قریب زخمی ہوئے۔

لیکن اسرائیلی فوج کے ترجمان نے العربیہ کو بتایا کہ نصیرات آپریشن میں فلسطینیوں کی ہلاکتوں کی تعداد 100 سے زیادہ نہیں ہے۔

اسرائیلی فوج نے پہلے ایک بیان میں اعلان کیا تھا کہ "نصیرات میں دن کے وقت ایک مشکل خصوصی آپریشن کے دوران چار اسرائیلی یرغمالیوں کو آزاد کرایا گیا تھا"۔

حماس کی وزارت صحت کے مطابق سات اکتوبر سے غزہ میں فلسطینیوں کی ہلاکتوں کی تعداد 36,801 ہو گئی ہے جب کہ 83,680 ہو چکےہیں۔

250 قیدی

قابل ذکر ہے کہ کل ہفتے کو چار قیدیوں کی بازیابی سے قبل حماس کے پاس 124 زندہ قیدی تھے۔ جبکہ حماس نے سات اکتوبر2023ء کو 250 کے لگ بھگ افراد کو قید کیا تھا۔ ان میں سے100 اسرائیلی قیدیوں کو گذشتہ برس نومبر میں ایک ہفتے کی جنگ بندی کے دوران رہا کردیا گیا تھا۔

اسرائیلی افواج کا خیال ہےکہ نویں مہینے میں داخل ہونے والی جنگ کے دوران اب تک تقریباً 30 قیدی مارے جا چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں