دیکھیے زلزلہ آیا تو ترک رکن پارلیمان آن ایئر انٹرویو چھوڑ کر کیسے بھاگ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ترکیہ میں 6 فروری کے تباہ کن زلزلہ کے بعد 20 فروری کی شام پھر زلزلے کے دو جھٹکوں نے بھونچال پیدا کردیا۔ نئے زلزلے کے دوران براہ راست نشریات میں کیمروں کے سامنے ترک رکن پارلیمان کے شرمناک لمحات سامنے آگئے۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ زلزلہ کا احساس ہوتے ہی رکن پارلیمنٹ نشریات چھوڑ کر بھاگ کھڑے ہوئے۔

Advertisement

ترک رکن پارلیمان لطفی خاشقجی ’’ہاٹے‘‘ میں ترک ٹی وی چینلز میں سے ایک چینل کو براہ راست انٹرویو دے رہے تھے۔ اس دوران انہوں نے زمین کو ہلتے ہوئے محسوس کیا تو وہ اتنے خوفزدہ ہوئے کہ سارے آداب چھوڑ کر بھاگ کھڑے ہوئے۔ انہیں براہ راست بھاگتے ہوئے دیکھا گیا۔لوگوں نے انہیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا۔ لطفی خاشقجی رپورٹر کو وہ کام بتا رہے تھے جو حکام نے زلزلہ متاثرہ علاقوں میں ملبہ ہٹانے کے لیے کیے ہیں ۔ ترک حکام نے اعلان کیا ہے کہ 20 فروری پیر کی شام نئے زلزلے میں 3 افراد جاں بحق اور 294 زخمی ہوگئے ہیں۔ زخمیوں میں سے 18 کی حالت تشویشناک ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں