.

پاکستان میں یو ٹیوب دو گھنٹے کھلنے کے بعد دوبارہ بند

وزیر داخلہ نے سائٹ کھلنے کا اعلان ٹویٹ کے ذریعے کیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
پاکستان میں یو ٹیوب پر کئی ماہ سے عائد پابندی ختم ہونے کے صرف دو گھنٹے بعد ہی پہلا حکم واپس لیتے ہوئے یو ٹیوب پر ایک مرتبہ پھر پابندی لگانے کا حکم جاری کر دیا گیا ہے۔

ہفتے کو سہ پہر کے وقت پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے آئی ٹی اینڈ ٹیلی کام کی وزارت کی جانب سے ایک حکم نامہ وصول ہونے کے بعد یو ٹیوب تک رسائی پر پابندی ختم کر دی تھی۔ مگر اس کے قریباً دو گھنٹے بعد اس حکم نامے کو واپس لے لیا گیا اور یو ٹیوب ایک مرتبہ پھر پابندی کی زد میں آ گئی۔

یاد رہے کہ جمعہ کی رات پاکستانی وزیر داخلہ رحمان ملک نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر کے ذریعے یہ خبر دی تھی کہ آئندہ چوبیس گھنٹوں میں یو ٹیوب ویب سائٹ تک رسائی ممکن ہو جائے گی اور اس بارے میں جلد ایک حکم نامہ جاری کردیا جائے گا۔

درایں اثنا بعض نجی ٹی وی چینلز نے دعوی کیا کہ یو ٹیوب کھلنے کے بعد ایسی خبریں اطلاعات گردش کرنا شروع ہو گئیں کہ گستاخانہ فلم کے کلپس اب بھی اس ویڈیو سائٹ پر موجود ہیں۔ ان چینلز کا دعویٰ ہے کہ یو ٹیوب پر دوبارہ پابندی انھی کی خبروں کے بعد لگائی گئی ہے۔