.

جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو نگراں وزیراعظم مقرر

ایک رکن کمیشن کا کھوسو کے نام پر اختلاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان الیکشن کمیشن نے جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو کو ملک کا نگراں مقرر کر دیا ہے۔ اس امر کا اعلان چیف الیکشن کمیشنز جسٹس فخر الدین جی ابراہیم نے اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب میں کیا۔

پاکستان کی قومی اسمبلی کی تحلیل کے آٹھ دن بعد الیکشن کمیشن نے اتوار کو ملک کے نگراں وزیراعظم کا انتخاب کیا۔

نگراں وزیر اعظم کے لیے حکومت کے نامزد کردہ ڈاکٹر عشرت حسین، جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار خان کھوسو اور حزبِ مخالف کے نامزد امیدواروں جسٹس ریٹائرڈ ناصراسلم زاہد اور رسول بخش پلیجو کے ناموں پر غور کیا گیا

تین ستمبر 1929 کو بلوچستان کے ضلع جعفرآباد کے گاؤں اعظم خان میں پیدا ہوئے۔ سن 1954 میں سندھ یونیورسٹی سے گریجویشن اور دو برس بعد کراچی یونیورسٹی سے قانون کی سند حاصل کی۔

ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت کے آخری ایام میں یعنی 20 جون 1977 میں بلوچستان ہائی کورٹ کے عارضی جج بنے۔ انہیں ضیاءالحق نے مستقل جج بنایا اور بطور چیف جسٹس انہوں نے 29 ستمبر 1991کو ریٹائر کیا۔ ریٹائرمنٹ کے ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں وفاقی شرعی عدالت کے جج بن گئے اور میاں نواز شریف کے دور میں 17 نومبر 1992 کو وفاقی شرعی عدالت کے چیف جسٹس بنے۔