انتخابات 2013: ''کوِئی نہیں'' بیلٹ پیپر میں نئے خانے کے اضافہ

انتخابی امیدواروں کے مخالف ووٹر خالی خانے کو نشان زد کرسکیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ملک بھر میں گیارہ مئی کو ہونے والے عام انتخابات کے لیے بیلٹ پیپرز میں پہلی مرتبہ خالی خانہ متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے اور کسی بھی امیدوار کے حق میں رائے نہ رکھنے والے ووٹر اس خانہ پر نشان لگا سکیں گے۔

بیلٹ پیپرز میں عام طور پر انتخابی امیدوار کے نام اور ان کے انتخابی نشانات ہوتے ہیں اور ووٹر اپنے انتخاب کے مطابق ان میں سے کسی ایک کے حق میں نشان لگاتے ہیں۔اگر وہ دوامیدواروں کے ناموں کے سامنے نشان لگادیں تو ان کا ووٹ منسوخ کردیا جاتا ہے لیکن ایسے ووٹروں کی رائے کا احترام کرتے ہوئے اب الیکشن کمیشن نے بیلٹ پیپرز کے سب سے آخر میں ایک خانہ خالی چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس کے ساتھ یہ تحریر لکھی ہوگی:مذکورہ بالا میں سے ''کوئی نہیں''۔

الیکشن کمیشن کے سیکریٹری اشتیاق احمد خان نے بدھ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ نگران وزیراعظم سے بیلٹ پیپرز میں ''مذکورہ بالا میں سے کوئی نہیں'' خانے کو شامل کرنے کے لیے ایک آرڈی ننس جاری کرنے کی درخواست کی جائے گی۔

انھوں نے بتایا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کے بارے میں فیصلہ آیندہ منگل تک کرلیا جائے گا۔قبل ازیں چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم کی صدارت میں اجلاس میں اپنی اسناد کی تصدیق نہ کرانے والے سابق ارکان پارلیمان کے نام الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر پوسٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں پولنگ کو سیٹلائٹ کے ذریعے مانیٹر کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں