.

پشاور: مسافر وین میں دھماکے سے نو افراد جاں بحق

صدرِ، نگراں وزیراعظم اور وزیر داخلہ کیجانب سے دھماکے کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے صوبہ خیبر پختنونخوا کے دارالحکومت پشاور کے علاقے متنی میں ایک مسافر ویگن میں بم دھماکے کے نتیجے میں نو افراد جاں بحق اور دس زخمی ہو گئے ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والوں میں تین خواتین اور سات مرد شامل ہیں جنہیں لیڈی ریڈنگ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ حکام کے مطابق کوہاٹ سے پشاور آنے والی ایک مسافر وین پشاور کے مضافاتی علاقے متنی کے شیر علی بازار کے قریب رکی تو وہاں دھماکہ ہو گیا۔

بم ناکارہ بنانے والے ایک اہلکار نے میڈیا کو بتایا دھماکہ خیز مواد مسافر ویگن کے چھت پر رکھا ہوا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ دھماکہ خیز مواد میں بال بیرنگ استعمال کرنے کے شواہد نہیں ملے ہیں۔

نجی ٹی وی چینلز پر حادثے کی دکھائی جانے والے فوٹیج واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ دھماکے سے مسافر وین کے عقبی حصے کو زیادہ نقصان پہنچا۔ ایس پی شفیع اللہ خان کے مطابق مسافر گاڑی میں امن لشکر کے اہلکار یا کوئی اہم شخصیت سوار نہیں تھی۔

خیال رہے کہ ملک میں آئندہ ماہ کی گیارہ تاریخ کو عام انتخابات منعقد ہو رہے ہیں اور ان انتخابات کے دوران امن و امان کی صورتحال کو نگراں حکومت کے لیے ایک بڑا چیلنج قرار دیا جا رہا ہے۔

پشاور کے مضافاتی علاقوں میں گزشتہ کچھ عرصے سے امن و امان کی صورتحال ایک بار پھر خراب ہو گئی ہے۔ متنی میں اس سے پہلے بھی شدت پسندی کے متعدد واقعات پیش آ چکے ہیں۔