.

بے نظیر قتل کیس: مشرف کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوانے کا حکم

پشاور ہائیکورٹ نے مشرف پر انتخابات لڑنے کی تاحیات پابندی لگا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وفاقی دارلحکومت اسلام آباد کے جڑواں شہر راولپنڈی میں انسدادِ دہشت گردی کی ایک خصوصی عدالت نے سابق فوجی صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کو چودہ روز کے جوڈیشل ریمانڈ پر بھیج دیا ہے۔ اس سے پہلے عدلت نے پرویز مشرف کا تیس اپریل تک جسمانی ریمانڈ دیتے ہوئے، انہیں وفاقی تفتیشی ادارے [ایف آئی اے] کی جوڈیشل ٹیم کے حوالے کر دیا تھا۔

منگل کے روز انسداد دہشتگردی دہشتگردی کی خصوصی عدالت کے جج چوہدری حبیب الرحمان نے بینظیر بھٹو قتل کیس کی سماعت کی۔ سماعت کے موقع پرعدالت کے اردگرد رینجرز کے نیم فوجی دستے اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی۔

دورانِ سماعت ایف آئی اے کے وکیل استغاثہ نے عدالت کو بتایا کہ پرویز مشرف کا چار روزہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر انہیں آج [منگل] دوبارہ پیش کیا جانا تھا تاہم سیکورٹی خدشات کے پیش نظر ان کا پیش کیا جانا خطرے سے خالی نہیں ہے لہٰذا پرویز مشرف کا جوڈیشل ریمانڈ دیا جائے۔

ایف آئی اے کے پراسیکیوٹر چوہدری ذوالفقار نے سیکورٹی خدشات کے حوالے سے وزارت داخلہ کا مراسلہ بھی عدالت میں پیش کیا جس پر فاضل عدالت نے ایف آئی اے کی درخواست منظور کرتے ہوئے سابق صدر پرویز مشرف کا چودہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ دے دیا۔

سماعت کے موقع پر پرویز مشرف کے وکیل کی جانب سے گزشتہ سماعت کے دوران جائیداد ضبطی اور بینک اکاؤنٹ بحال کرنے کی درخواست پر منگل بھی سماعت نہ ہو سکی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پراسیکیوٹر ایف آئی اے چوہدری ذوالفقار کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف نے ریمانڈ کے دوران مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ تعاون نہیں کیا۔

الیکشن لڑنے پر تاحیات پابندی

ادھر منگل کے روز پشاور ہائیکورٹ نے پرویز مشرف کی کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف اپیل خارج کرتے ہوئے عام انتخابات لڑنے پر تاحیات پابندی عائد کر دی ہے۔ سابق صدر پر ویز مشرف نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 32 چترال سے کاغذات مسترد ہونے پر پشاور ہائی کورٹ میں اپیل کی گئی تھی۔

پرویز مشرف پریشان

عدالتی فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے زیر حراست پرویز مشرف کے ترجمان اور آل پاکستان مسلم لیگ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر امجد نے کہا کہ الیکشن سے روکے جانے پر پرویز مشرف پریشان ہیں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر امجد نے کہا کہ پرویز مشرف کو تحریک طالبان پاکستان اور غازی فورس کی طرف سے دھمکیاں ملی ہیں۔ سابق صدرکے حوصلے بلند ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 4 مئی کو ججز نظر بندی کیس میں ضمانت کے لیے عدالت کو درخواست دیں گے۔ ڈاکٹر امجد نے کہا کہ 3 مئی کو بے نظیر قتل کیس میں راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی میں پیشی ہے۔